اصغر خان کیس،اسلم بیگ‘ اسد درانی سمیت دیگر سے بیان لینے کا فیصلہ

اصغر خان کیس،اسلم بیگ‘ اسد درانی سمیت دیگر سے بیان لینے کا فیصلہ

 اسلام آباد (آئی این پی) وفاقی تحقیقاتی ادارے( ایف آئی اے) کے ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل غالب علی بندیشہ کی زیر صدارت اصغر خان کیس کی تحقیقات کیلئے قائم کردہ چار رکنی کمیٹی کا پہلا اجلاس منگل کو ایف آئی اے ہیڈ کوارٹر میں ہوا۔ اجلاس میں کیس کی تحقیقات کیلئے مختلف پہلوﺅں کا جائزہ لے کر حکمت عملی طے کی گئی۔ اجلاس میں کمیٹی کے ارکان قدرت اللہ خان، نجف قلی مرزا اور ڈاکٹر عثمان انور نے شرکت کی۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں سابق آرمی چیف جنرل (ر) اسلم بیگ‘ سابق ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل (ر) اسد علی درانی سمیت ان تمام افراد جن کا نام سپریم کورٹ کے اصغر خان کیس کے فیصلے میں آیا تھا سے تحقیقات اور بیان لینے کا فیصلہ کیا گیا ۔ سپریم کورٹ نے تحریک استقلال کے سربراہ ایئرمارشل (ر) اصغر خان کی طرف سے فوج اور آئی ایس آئی کے سیاست دانوں میں رقوم تقسیم کرنے اور بے نظیر بھٹو کی پہلی حکومت کو گرائے جانے پر آئینی درخواست دائر کی تھی جس کا کئی سالوں کے بعد گزشتہ سال سپریم کورٹ نے فیصلہ کرکے ایف آئی اے کو تحقیقات کرکے ذمہ داران کے خلاف مقدمات کے اندراج کا حکم دیا تھا۔ گزشتہ روز وزیر داخلہ کے اعلان کے مطابق اصغر خان کیس کی تحقیقات کے لئے ڈائریکٹر جنرل ایف آئی اے نے 4 رکنی تحقیقاتی کمیٹی ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل ایف آئی اے غالب علی بندیشہ کمیٹی کی سربراہی میں قائم کی گئی تھی۔وزیر داخلہ نے اس کمیٹی کو اپنی تحقیقات مکمل کرنے کیلئے ایک ٹائم فریم دیا ہے جس کا اعلان نہیں کیا گیا کمیٹی کو اس کے اندر اپنی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔

                                اصغر خان کیس

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...