بلدیاتی انتخابات کے التواکے لیے سندھ کی درخواست مسترد، حتمی شیڈول جاری

بلدیاتی انتخابات کے التواکے لیے سندھ کی درخواست مسترد، حتمی شیڈول جاری

الیکشن کمیشن کا بیلٹ پیپرز کی چھپائی اور مقناطیسی سیاہی کی تیاری کیلئے مزیدمہلت دینے سے انکار

بلدیاتی انتخابات کے التواکے لیے سندھ کی درخواست مسترد، حتمی شیڈول جاری

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) الیکشن کمیشن نے سندھ میں بلدیاتی انتخابات پنجاب کے ساتھ کرانے کی درخواست مسترد کردی ہے ،پرنٹنگ کارپوریشن اور کونسل فار سائنٹیفک اینڈ انڈسٹریل ریسرچ کو بیلٹ پیپرز کی چھپائی اور مقناطیسی سیاہی کی تیاری کےلئے مزید وقت دینے سے بھی انکارکرتے ہوئے، دونوں اداروں کومقررہ مدت میں انتظامات مکمل کرنے کی ہدایت کی ہے جبکہ18 جنوری کوسندھ اور 30 جنوری کو پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کا مجوزہ شیڈول ان صوبوں کے سامنے رکھ دیا گیا۔قائم مقام چیف الیکشن کمشنر جسٹس تصدق حسین جیلانی نے کہا ہے کہ آئین کے آرٹیکل 220 کے تحت تمام ادارے الیکشن کمیشن کے معاونت اوراس کے احکامات پر عمل درآمد کے پابند ہیں۔منگل کو قائم مقام چیف الیکشن کمشنر جسٹس تصدق حسین جیلانی کے زیرصدارت الیکشن کمیشن کے اجلاس میں بلدیاتی انتخابات کی تیاریوں سے متعلق معاملات کاجائزہ لیاگیا۔ اجلاس میں مختلف وزارتوں کے وفاقی سیکرٹریز،چاروں صوبوں کے چیف سیکرٹریز، چیئرمین نادرااور مینیجنگ ڈائریکٹر پرنٹنگ کارپوریشن پاکستان نے شرکت کی ۔ پرنٹنگ کارپوریشن نے درخواست کی کہ انہیں پنجاب کے بیلٹ پیپرز کی چھپائی کے لیے ایک ماہ درکار ہے، اس لیے پولنگ 30جنوری کی بجائے 19فروری کو کرائی جائے۔ پی سی ایس آئی آر نے بھی مقناطیسی سیاہی کی تیاری کے لیے زیادہ وقت مانگا۔ الیکشن کمیشن نے دونوں اداروں کی درخواستیں مسترد کرتے ہوئے مقررہ مدت میں انتظامات مکمل کرنے کی ہدایت کی۔ چیف سیکرٹری بلوچستان کی طرف سے صوبے میں بلدیاتی انتخابات کے شیڈول میں تبدیلی کی درخواست بھی مستردکردی گئی۔ چیف سیکرٹری نے کہاکہ کئی مقامات پر احتجاجی مظاہروں کے دوران بیلٹ پیپرز جلادیے گئے ہیں ۔ بلدیاتی انتخابات میں توسیع کے حوالے سے سندھ حکومت کی درخواست بھی رد کردی گئی ۔چیف سیکرٹری سندھ نے درخواست کی تھی کہ بلدیاتی انتخابات کےلئے مہلت دی جائے یاانتخابات پنجاب کے ساتھ کرائے جائیں ۔ اس موقع پرخطاب کرتے ہوئے قائم مقام چیف الیکشن کمشنر نے کہاکہ صوبوں نے الیکشن کمیشن سے مشاورت کے بغیر سپریم کورٹ کو تاریخیں دے دیں۔ آئین کے آرٹیکل 220 کے تحت تمام ادارے الیکشن کمیشن کی معاونت اوراس کے احکامات پر عمل درآمد کے پابند ہیں۔ قائم مقام چیف الیکشن کمشنرنے متعلقہ محکموں سے کہاکہ وہ بلدیاتی انتخابات کے شفاف انعقاد کیلئے کمیشن سے مکمل تعاون کریں ۔ انہوں نے کہاکہ یہ لوگوں کا جمہوری حق ہے کہ انہیں مقامی حکومت تک رسائی ملے ۔ چیف سیکرٹری خیبر پختونخوا نے بتایا کہ خیبر پختونخوا میں حلقہ بندیاں پندرہ جنوری کو مکمل ہوں گی ۔ سندھ اور پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کے لیے الیکشن کمیشن کا مجوزہ شیڈول بھی اجلاس میں پیش کیا گیا جس کے مطابق سندھ میں بلدیاتی انتخابات اٹھارہ جنوری اور پنجاب میں تیس جنوری کو ہوں گے۔ کاغذات نامزدگی دس سے تیرہ دسمبر تک وصول کئے جائیں گے۔ سکروٹنی کا عمل پندرہ سے انیس دسمبر تک ہوگا۔ بیس اور اکیس دسمبرکو اپیلیں دائر ہو سکیں گی جبکہ اپیلوں پر فیصلے بائیس سے پچیس دسمبر تک ہوں گے۔ چھبیس دسمبر کو حتمی فہرست جاری کی جائے گی۔ پنجاب اور سندھ میں بلدیاتی انتخابات کا باضابطہ شیڈول انتیس نومبر کو جاری کیا جائے گا۔

مزید : اسلام آباد

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...