لاہورمیں پنجاب یونیورسٹی کی طالبہ بس تلے آکر جاں بحق، کنڈکٹرزخمی

لاہورمیں پنجاب یونیورسٹی کی طالبہ بس تلے آکر جاں بحق، کنڈکٹرزخمی
  • لاہورمیں پنجاب یونیورسٹی کی طالبہ بس تلے آکر جاں بحق، کنڈکٹرزخمی
  • لاہورمیں پنجاب یونیورسٹی کی طالبہ بس تلے آکر جاں بحق، کنڈکٹرزخمی
  • لاہورمیں پنجاب یونیورسٹی کی طالبہ بس تلے آکر جاں بحق، کنڈکٹرزخمی
  • لاہورمیں پنجاب یونیورسٹی کی طالبہ بس تلے آکر جاں بحق، کنڈکٹرزخمی

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) ماڈل ٹاﺅن میں پنجاب یونیورسٹی کی طالبہ اپنی ہی یونیورسٹی کی بس تلے آ کر جاں بحق ہو گئی جبکہ بس کنڈکٹرمعمولی زخمی ہوا۔ ماڈل ٹاو¿ن کے بلاک کی رہائشی علیشہ خالد یونیورسٹی جانے کیلئے اپنی والدہ کے ہمراہ سٹاپ پر پہنچی۔ پنجاب یونیورسٹی کی بس آنے پر جونہی وہ بس پر چڑھنے لگی تو اوورلوڈنگ کی وجہ سے دروازے پر سے ہی اچانک پھسلی اور اسی بس کے پچھلے ٹائروں تلے آکر کچلی گئی۔ لوگوں نے ریسکیو کو کال کی مگر امدادی ٹیموں کے آنے سے پہلے ہی وہ دم توڑ گئی۔ طالبہ کے ساتھ بس کا کنڈیکٹر بھی گرا جو معمولی زخمی ہوا جب کہ بس ڈرائیور موقع سے فرار ہو گیا۔ پنجاب یونیورسٹی نے ڈرائیورکو معطل کرکے تحقیقاتی کیلئے کمیٹی قائم کردی ۔ ڈان نیوز کے مطابق یونیورسٹی ترجمان نے کہاکہ بچی کی والدہ نے زبردستی بس پر چڑھایا، بچی نے چھلانگ لگائی جس کی وجہ سے ہلاکت ہوئی تاہم مزید تحقیقات کررہے ہیں۔ ترجمان نے بتایاکہ عملہ قصوروار ہواتوکارروائی کریں گے ۔ساتھی طالبہ کی ہلاکت کے بعد یونیورسٹی میں طلباءنے احتجاج اور انتظامیہ کے خلاف نعرہ بازی کی ۔ طلباءنے ذمہ داران کے خلاف کارروائی اور بسوں کی تعداد بڑھانے کا مطالبہ کیا۔پنجاب یونیورسٹی کے وائس چانسلر نے میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے بتایاکہ تحقیقات کی جارہی ہیں ،سیاسی بنیادوں پر بھرتیاں کی گئیں ، دودفعہ موٹروے پولیس سے ڈرائیوروں کی ٹریننگ کرواچکے ہیں ،حادثہ غفلت کا نتیجہ ہوسکتاہے ۔

مزید : لاہور /اہم خبریں

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...