پولیس نفرت انگیز مواد، منافرت پرمبنی لا ئوڈسپیکرکااستعمال اور وال چاکنگ ختم کرے:نواز شریف

پولیس نفرت انگیز مواد، منافرت پرمبنی لا ئوڈسپیکرکااستعمال اور وال چاکنگ ختم ...
پولیس نفرت انگیز مواد، منافرت پرمبنی لا ئوڈسپیکرکااستعمال اور وال چاکنگ ختم کرے:نواز شریف

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ سانحہ راولپنڈی مجرمانہ غفلت کا نتیجہ ہے،اس غفلت کے مرتکب افرادکی نشاندہی کی جائے۔ وزیر اعظم نواز شریف کی سربراہی میں اعلیٰ سچح کا اجلاس منعقد ہوا جس میں وزیراعلی پنجاب میاں شہباز شریف، وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان، وزیر اطلاعات و نشریات پرویز رشید، ڈی جی آئی ایس آئی، سیکرٹری داخلہ اور پنجاب کے چیف سیکریٹری اور سیکرٹری داخلہ نے شرکت کی اجلاس میں امن و امان اور ڈرون حملوں کے بعد کی صورتحال سمیت طالبان سے مذاکرات اور دیگر اہم امور پر غور کیا گیا، ڈی جی آئی ایس آئی نے وزیر اعظم کو ملک کی اندرونی اور سرحدی سیکیورٹی صورتحال پر بریفنگ دی ہے۔اجلاس میں وزیر اعظم کو سانحہ راولپنڈی کی ابتدائی رپورٹ بھی پیش کی گئی۔ بتایا گیا کہ سانحہ راولپنڈی میں11افرادجاں بحق اور56زخمی ہوئے۔ فوٹیج کی مدد سے 9 افراد کو گرفتار بھی کر لیا گیا ہے ۔ نواز شریف نے کہا کہ پولیس اورانتظامیہ کی مجرمانہ خاموشی اور نااہلی کسی بھی صورت برداشت نہیں کی جائے گی۔ انہوں نے پتھراو¿، نفرت انگیزتقاریر اورفائرنگ کو ناقابل قبول قرار دیتے ہوئے پولیس کو ہدایت کی ہے کہ وہ ستی کا مظاہرہ کرنے کے بجائے جلد از جلد اس سانحے میں ملوث افراد کی نشاندہی اور قانون کا احترام نہ کرنے والوں کے خلاف سخت ترین کارروائی شروع کریں۔ انہوں نے ہدایت کی کہ پولیس نفرت انگیز مواد، منافرت پرمبنی لاو¿ڈسپیکرکااستعمال اور وال چاکنگ ختم کرے۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ سوشل میڈیاپرمذہبی منافرت پرمبنی پروپیگنڈا قابل افسوس ہے،انٹرنیٹ سے نفرت پھیلانےوالوں کے خلاف کارروائی کاقانون پیش کیاجائے اور اس سلسلے مین سائبرقوانین پرمبنی مسودہ منظوری کے لئے آئندہ چندروزمیں منظوری بھجوایاجائے۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں