’جو بھی اب یہ شرمناک کام کر ے اسے 5 سال کیلئے جیل میں ڈال کر ایک کروڑ روپے جرمانہ بھی کرو ‘

’جو بھی اب یہ شرمناک کام کر ے اسے 5 سال کیلئے جیل میں ڈال کر ایک کروڑ روپے ...
’جو بھی اب یہ شرمناک کام کر ے اسے 5 سال کیلئے جیل میں ڈال کر ایک کروڑ روپے جرمانہ بھی کرو ‘

  

جدہ(نیوزڈیسک) سعودی عرب میں خواتین کو حراساں کرنے والے مردوں کے خلاف سخت قوانین بنانے کی تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں ۔قانونی مشیر ظلال الہندی کا کہنا تھا کہ شوریٰ کونسل نے خواتین کو حراساں کرنے والوںکے لئے ایک قانون کا مسودہ تیار کر لیا ہے۔ اس قانون کے منظور ہونے کے بعد خواتین کو حراساں کرنے والوں کو پانچ سال قید اور پانچ لاکھ سعودی ریال تک جرمانے کی سزا ہو سکے گی۔ کونسل نے ابھی تک اس قانون پر ووٹنگ نہیں کی لیکن خواتین کو حراساں کرنے کے بڑھتے ہوئے واقعات کے پیش نظر یہ مطالبہ زور پکڑ رہا ہے کہ جلد اس قانون کو نافذ کر دیا جائے۔سعودی گزٹ اور روزنامہ اوکاز نے اس سلسلے میں کئی واقعات بھی رپورٹ کئے ہیں جس میں بتایا گیا ہے کہ کس طرح سے مرد مملکت میں خواتین کو حراساں کرتے ہیں۔

مزید : عرب دنیا