مزداکے داخلے پرپابندی ختم نہ ہوئی تو شہر جام کر دیں گے ، محمد الطاف پہلوان

مزداکے داخلے پرپابندی ختم نہ ہوئی تو شہر جام کر دیں گے ، محمد الطاف پہلوان

  



لاہور (اپنے خبر نگار سے ) لاہور ٹریفک پولیس کی جانب سے منی مزدا کی بغیر مشاورت دن کے اوقات میں شہر میں داخلے پر پابندی عائد کرنے سے ہزاروں خاندانوں کا روزگار متاثر ہو گیا ہے اور پُر امن احتجاج ریکارڈ کروانے کے بعد حکومت پنجاب اور لاہور ٹریفک پولیس سمیت دیگر متعلقہ محکموں نے بھی آج تک ایک نہیں سُنی ۔ اگر مزدا کی لاہور میں پابندی کو ختم نہ کیا تو آج صبح 11بجے شہر کے داخلی اور خارجی راستوں پر منی مزدا ٹرانسپورٹ اور متاثرہ خاندانوں کا سمندر ہو گا اور لاہور کو جام کر دینگے جسکی ذمہ داری ٹریفک پولیس اور حکومت وقت پر ہو گی کیونکہ مذاکراتی عمل میں ہمارے مطالبات کو نظر انداز کیا جا رہا ہے جسکی وجہ سے کاروبار تباہ اور گھروں کے چولہے ٹھنڈے پڑ گئے ہیں ان خیالات کا اظہار آل پاکستان منی مزدا گڈز ٹرانسپورٹرزایسوسی ایشن کے سر پر ست اعلیٰ محمد الطاف پہلوان ،صدر حاجی شیر علی چوہدری ،چےئر مین چوہدری جمیل ،جنرل سیکرٹری تنویر جٹ ،سینئر نائب صدر ناصر چٹھہ سمیت دیگر گڈز ٹرانسپورٹرز رہنماؤں نے بند روڈ پر پریس کانفر نس کر تے ہوئے کیا رہنماؤں کا کہنا تھا کہ پُر امن احتجاج اور مذاکرات کا کئی روز سے سلسلہ جاری ہے مگر حکومت وقت اور ٹریفک پولیس کی جانب سے مسائل کو حل نہیں کیا جا رہا اب منی مزدا گڈز ٹرانسپورٹرز کیلئے احتجاج کر نے کے علاوہ کوئی حل نہیں ہے۔ لاہور ٹریفک پولیس نے سٹیک ہو لڈرز کی مشاورت کے بغیر ہی پابندی عائد کر دی جسکی وجہ سے ہمارے گھروں کے چولہے ٹھنڈے پڑ گئے ہیں ہم نے تمام فورم جن میں وزیر اعلیٰ پنجاب سمیت کمشنر ،ڈی سی اور مےئر سے مطالبات کے حل کیلئے ملنے کی کوشش کی تحریری درخواست دی مگر کوئی بات سننے کو تیار نہیں ہے ہم اپنے مطالبات کے حل کیلئے آج شہر کے داخلی اور خارجی راستوں پر دھر نا دینگے اور پابندی کے خاتمے تک احتجاج جاری رہے گا چاہے جتنا بھی وقت لگ جائے ہم ایک بار بھر وزیر اعلیٰ پنجاب سے اپیل کر ئینگے ہمیں احتجاج کر نے پر مجبور نہ کیا جائے جسکی وجہ سے عوام کو پر یشانی کا سامنا کرناپڑ ے مسائل کو حل کیا جائے اور پابندی ختم کر دی جائے ورنہ لاہور میں پیر کے روز تمام شہر کے داخلی اور خارجی راستے بند ہو نگے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1