عید میلاد النبیؐ کے موقع پر سکیورٹی کے غیر معمولی اقدامات کو یقینی بنایا جائے : اے ڈی خواجہ

عید میلاد النبیؐ کے موقع پر سکیورٹی کے غیر معمولی اقدامات کو یقینی بنایا ...

  



کراچی(این این آئی)آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ نے دفتر سے جاری ہدایات میں کہا ہے کہ صوبے میں امن وامان کی صورتحال اور اس ضمن میں درپیش چیلنجز کو سامنے رکھتے ہوئے رینج,ڈسٹرکٹس اور زونز کی سطح پر باہم مشاورت اور پاکستان رینجرز سندھ سمیت قانون نافذ کرنیوالے دیگر اداروں وانٹیلی جینس ایجنسیوں سے مربوط روابط پر مشتمل بارہ ربیع الاول کنٹی جینسی پلان جلد مرتب کیا جائے تاکہ صوبے میں سیکیورٹی صورتحال کو مذید مستحکم بناتے ہوئے عوام کی جان ومال کے تحفظ کو یقینی بنایا جاسکے ۔انہوں نے کہا کہ کنٹی جینسی پلان کے تحت ضلعوں کی سطح پر تمام اسٹیک ہولڈرز کے تعاون سے بین المسالک ہم آہنگی فروغ کے فروغ کے اقدامات سمیت دل آزار وال چاکنگ, مذہبی, مسلکی منافرت,اشتعال انگیز پمفلٹس,بینرز, ہینڈ آؤٹس یا دیگر مواد کی تقسیم,اشتعال انگیز تقاریر کی روک تھام کے علاوہ لاؤڈ اسپیکرز ایکٹ پر عمل درآمد کو بھی یقینی بنایا جائے ۔انہوں نے کہا کہ 12ربیع الاول کے مرکزی جلوس کے روٹس, مرکزی اجتماع گاہ پر سیکیورٹی کے خصوصی اقدامات کے تحت بم ڈسپوزل اسکواڈ سے سوئپنگ, کلیئرنس,واچ ٹاورز کے قیام, منتخب کردہ بلند عمارتوں پر شارپ شوٹرز کی تعیناتیوں, ہر قسم کی پارکنگ کو مناسب فاصلوں پر رکھنے , پارکنگ لاٹس پر نگرانی رکھنے , انر آؤٹر کارڈن, ہیڈ اینڈ ٹیل پر پولیس کمانڈوز کو فرائض تفویض کرنے , ایڈوانس انٹیلی جینس کلیکشن وشیئرنگ کو مزید تقویت دینے , رینڈم اسنیپ چیکنگ, پیٹرولنگ,پکٹنگ وغیرہ کے امور کو ہر سطح پر انتہائی ٹھوس اور غیر معمولی بنایا جائے ۔انہوں نے کہا کہ تمام مساجد, امام بارگاہوں,مدارس, مزارات,درگاہوں وغیرہ پر سیکیورٹی مذید سخت کرنے کے ساتھ ساتھ دیگر ایسے کھلے مقامات کہ جن پر اس خصوصی دن کی مناسبت سے نعتیہ محافل, وعظ, درس,بیان وغیرہ کا اہتمام کیا جارہا ہو تھانہ جات کے لحاظ سے جملہ سیکیورٹی اقدامات کو فول پروف بنایا جائے ۔آئی جی سندھ نے کہا کہ 12ربیع الاول حفاظتی منصوبے کے تحت مختلف علاقوں کو انتہائی حساس, حساس اور نارمل درجہ بندیوں میں تقسیم کیا جائے جبکہ مرکزی جلوسوں کی گذرگاہوں کو باقاعدہ فاصلوں کو پیش نظر رکھ کر سیکٹرز اور سب سیکٹرز میں تقسیم کیا جائے تاکہ بائی نیم سپروائزری ذمہ داریاں تفویض کرتے ہوئے سیکیورٹی کے مجموعی امور کو ٹھوس اور مربوط بنایا جاسکے ۔

آئی جی سندھ

کراچی(این این آئی)آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ نے کرپٹ پولیس افسران کے خلاف کارروائی کی سفارش کردی ہے۔ آئی جی سندھ نے مذکورہ افسران کی فہرست وزیراعلی سندھ اور چیف سیکرٹری سندھ کو ارسال کر دی ہے،وزیراعلیٰ کی منظوری کے بعد کارروائی شروع کی جائے گی۔تفصیلات کے مطابق آئی جی سندھ نے سندھ پولیس کی کالی بھیڑوں کی فہرست وزیراعلی اور چیف سیکرٹری کو پیش کر دی ہے، فہرست میں پولیس کو بدنام کرنے والے ان تمام افسران کے نام شامل ہیں جو سپریم کورٹ کو پیش کیے گئے ہیں، وزیر اعلی سید مراد علی شاہ کی اجازت کے بعد ان کیخلاف محکمہ جاتی کارروائی شروع کر دی جائے گی۔واضح رہے کہ دو دن قبل آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ نے اغوا برائے تاوان، ٹارگٹ کلنگ، کرپشن اور محکمہ میں غیرقانونی بھرتیوں اور دیگر سنگین جرائم میں ملوث پولیس افسران کی فہرست عدالت میں پیش کی تھی۔ سپریم کورٹ کے حکم پر سابق آئی جی سندھ غلام حیدر جمالی سمیت دس افسران کیخلاف تحقیقات شروع کردی گئی ہے، ایف آئی اے سمیت دیگر اداروں کے اعلی افسران کو انکوائری آفیسر مقرر کیا گیا ہے۔چیف سیکریٹری سندھ نے رپورٹ میں پیشرفت سے سپریم کورٹ کو آگاہ کیا تھا، غیرقانونی بھرتیوں، فنڈز میں ہیر پھیر کے سنگین الزامات کے بعد اعلی عدالت کے حکم پر سندھ پولیس کے بڑے بڑے افسران کیخلاف بڑی انکوائری شروع ہونے جارہی ہے۔ایف آئی اے سمیت دیگر اداروں کے اعلی افسران انکوائری آفیسر مقرر کئے گئے ہیں، ذرائع کے مطابق سابق ڈی آئی جی ٹریننگ، سابق ایڈیشنل آئی جی سندھ ، سابق ایس پی، سابق ایڈیشنل آئی جی فنانس اور دیگر کے خلاف تحقیقات ہوگی۔

مزید : علاقائی