ٹرمپ کا ’’غیر قانونی‘‘ حکم نہیں مانوں گا: امریکی کمانڈر جنرل جان ہیٹن

ٹرمپ کا ’’غیر قانونی‘‘ حکم نہیں مانوں گا: امریکی کمانڈر جنرل جان ہیٹن

  



واشنگٹن (اظہر زمان، بیورو چیف) امریکہ کے چوٹی کے ایٹمی کمانڈر فضائیہ کے جنرل جان ہیٹن نے واضح کیا ہے اگر صدر ٹرمپ نے ایٹمی حملہ کرنے کا ’’غیر قانونی‘‘ حکم دیا تو وہ اس سے انکار کردیں گے۔ انہوں نے یہ تبصرہ کینیڈا کے شہر ہیلی فیکس میں انٹرنیشنل سکیورٹی فورم سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ واشنگٹن میں پینٹا گون نے ان کے خطاب کا متن جاری کیا ہے جس کے مطابق انکا کہنا تھا ’’جیسا کہ لوگ سمجھتے ہیں ہم ویسے بیوقوف نہیں ، جب ذمہ داری عائد ہو تو سوچنا پڑتا ہے‘‘ امریکی فضائیہ کے کمانڈر ایٹمی ذخیرے کے انچارج ہیں اور صدر ٹرمپ امریکہ کے سپریم کمانڈر ہونے کی حیثیت سے اگر ایٹمی حملہ کرنے کا حکم دیتے ہیں تو وہ عملدرآمد کیلئے وزیر دفاع کے ذریعے ان تک پہنچے گا۔ حملہ کرنے کیلئے ایٹمی میزائل ان کے حکم سے ہی فضا میں بلند ہوسکتا ہے۔ جنرل ہیٹن نے کہا میرا کام صدر کو مشورہ دینا ہے اور اگر صدر وزیر دفاع کے ذریعے یا براہ راست مجھے کوئی ایکشن لینے کا حکم دیتے ہیں تو میں سوچ سمجھ کر اس پر عمل کروں گا، اگر یہ حکم غیر قانونی ہوا تو میں انہیں بتاؤں گا مسٹر پریذیڈنٹ! یہ غیر قانونی ہے اور اسکا قانونی طریقہ بتاؤں گا جو اتنا پیچیدہ نہیں ۔

جان ہیٹن

مزید : صفحہ اول