عوام کے جان و مال کا تحفظ سہولیات کی فراہمی حکومت کی اولین ترجیح : وزیر اعظم

عوام کے جان و مال کا تحفظ سہولیات کی فراہمی حکومت کی اولین ترجیح : وزیر اعظم

  



کراچی (این این آئی)وزیراعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ وفاق پورے ملک کی یکساں ترقی کے وژن پر گامزن ہے ۔ عوام کی جان و مان کا تحفظ اور انھیں ہر قسم کی سہولیات کی فراہمی حکومت کی اولین ترجیح ہے ۔ ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے اتوار کو گورنر ہاؤس کراچی پہنچنے پر گورنر سندھ محمد زبیر سے ملاقات کے موقع پر کیا۔ ملاقات میں صوبہ کی صورتحال،امن و امان ، وفاق کے تحت جاری منصوبوں میں ہونے والی پیش رفت، معاشی ، اقتصادی اور تجارتی سرگرمیوں سمیت اہمیت کے حامل دیگر امورپر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ وزیراعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ کراچی ملک کی شہ رگ ہے جس کی ترقی وخوشحالی کے اثرات پورے ملک پر مرتب ہو تے ہیں ۔ کراچی میں دیر پاامن و امان کے لئے ہر ممکن اقدامات اٹھائے جارہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ امن و امان کے قیام کے بعد ترقیاتی کاموں پر بھرپور توجہ مرکوز ہے ۔ صوبہ کی ترقی و خوشحالی کے لئے وفاق کا تعاون جاری رہے گا ۔ امن و امان کے قیام سے معاشی ،اقتصادی ، تجارتی ، سماجی اور ثقافتی سرگرمیوں میں تسلسل سے اضافہ ہو رہا ہے ۔ اس موقع پر گورنر سندھ محمد زبیر نے وزیراعظم کو بتایا کہ صوبہ کی ترقی و خوشحالی کے لئے تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں،صنعت کار ، تاجر اور دیگر تمام اسٹیک ہولڈر ز کے ساتھ مشاورت کا سلسلہ بھی جاری ہے ۔ہر ایک صوبہ کی ترقی و خوشحالی کا خواہش مند ہے۔ وفاق کے تعاون سے جاری ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل سے عوام کا معیار زندگی بلند ہو گا ۔ انہوں نے کہا کہ کراچی ترقیاتی پیکج سے عوامی مسائل کے حل میں مدد ملے گی ۔ تمام اسٹیک ہولڈرز کی مشاورت سے کراچی ترقیاتی پیکج کے ترقیاتی منصوبے تشکیل دیئے گئے ہیں ۔کراچی ترقیاتی پیکج اور وفاق کے تحت جاری دیگر منصوبوں کو عوام قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے ۔ گورنر سندھ نے کہا کہ وفاق کی معاشی پالیسی کے سب سے زیادہ مثبت نتائج صوبہ سندھ سے حاصل ہو رہے ہیں ۔حیدر آباد ، جیکب آباد ، ٹھٹھہ ،ٹنڈو محمد خان اور کراچی میں وفاق کے تعاون سے جاری منصوبوں کی اہمیت بہت بڑھ گئی ہے ۔ قبل ازیں وزیراعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی کراچی ایئرپورٹ پر پہنچے تو گورنر سندھ محمد زبیر اور وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے ان کا استقبال کیا۔ اس موقع پر دیگر اعلیٰ حکام بھی موجود تھے۔

وزیراعظم

مزید : صفحہ اول