وکیل کوتشددکانشانہ بنانے کی درخواست پرملتان کے 6 وکلاء کے لائسنس آئندہ سماعت تک معطل، سماعت 2 دسمبر تک ملتوی

وکیل کوتشددکانشانہ بنانے کی درخواست پرملتان کے 6 وکلاء کے لائسنس آئندہ سماعت ...

ملتان (خبر نگار خصوصی)پنجاب بارکونسل نے وکیل کوتشددکانشانہ بنانے کی درخواست پرملتان کے 6 وکلاء کے لائسنس آئندہ سماعت تک معطل کرتے ہوئے سماعت 2 دسمبر تک ملتوی کرنیکا(بقیہ نمبر47صفحہ12پر )

حکم دیاہے۔اس ضمن میں پنجاب بارکونسل کی ایگزیکٹوکمیٹی کے ممبران محمدعارف خان گرمانی اورسید فرہادعلی شاہ کے دستخطوں سے جاری حکم میں کہاگیاہے کہ ملتان کے ملک محمدعمران بھٹہ ایڈووکیٹ کی جانب سے درخواست دی گئی تھی کہ اس کے سینئرکے بارے میں تضحیک آمیز الفاظ بارے جنرل باڈی اجلاس میں بات کی تواس کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دیں اور11 اگست کووکلاء محمداجمل کانجو،شاہدبلوچ،جوادحسین ترگڑ،طاہرکھاکھی،شاہدکھوکھراورمحمدرمضان نے ا س کوتشددکانشانہ بنایااورچیمبرمیں لیجاکرزدوکوب کیا جس کی وجہ سے اس کے کپڑے پھٹ گئے اور وہ بے ہوش ہوگیااس لئے مذکورہ وکلاء کے خلاف کارروائی کرکے لائسنس منسوخ کیاجائے۔جس پر مذکورہ وکلاء کو طلب کیاگیاتو بغیر دستخطوں کے وکالت نامہ پیش کیاگیاہے جس کی کوئی قانونی حثیت نہیں ہے اورجان بوجھ کرغیرحاضر ہونے کے ساتھ کمیٹی کے ساتھ چھپن چھپائی کاکھیل کھیلاجارہاہے اور مذکورہ وکلاء کااقدام قابل اعتراض ہے اس لئے مذکورہ وکلاء کے لائسنس آئندہ سماعت تک معطل کئے جاتے ہیں اورسماعت میں پیش ہونے پر لائسنس بحال کردئیے جائیں گے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر