دھرنا 24 سے 48 گھنٹوں میں ختم کرادیا جائے گا، یہ ختم نبوت ﷺ کی خدمت نہیں پاکستان کی بدنامی کا باعث ہے: احسن اقبال

دھرنا 24 سے 48 گھنٹوں میں ختم کرادیا جائے گا، یہ ختم نبوت ﷺ کی خدمت نہیں ...
دھرنا 24 سے 48 گھنٹوں میں ختم کرادیا جائے گا، یہ ختم نبوت ﷺ کی خدمت نہیں پاکستان کی بدنامی کا باعث ہے: احسن اقبال

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ اگلے 24 سے 48 گھنٹوں میں دھرنا ختم کرادیا جائے گا، تحریک لبیک کے دھرنے کی تصاویر کو ملک دشمن عناصر دنیا بھر میں پھیلا کر پاکستان کو بدنام کر رہے ہیں، اب یہ دھرنا ختم نبوت ﷺ کی خدمت نہیں بلکہ ملک کی بدنامی کا باعث بن رہا ہے، ہم خون خرابہ نہیں چاہتے، اسلام آباد ہائیکورٹ کو یقین دہانی کرادی ہے کہ آئندہ کسی کو بھی دھرنا نہیں دینے دیا جائے گا۔

اسلام آباد ہائیکورٹ میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا کہ ملک دشمن لال مسجد اور ماڈل ٹاﺅن جیسا واقعہ چاہتے ہیں لیکن ہم ربیع الاول کے مہینے میں کوئی کشیدہ صورتحال نہیں چاہتے تاکہ ہر کوئی اپنے اپنے علاقے میں جشن عید میلاد النبی ﷺ کی تقریبات شایانِ شان طریقے سے منا سکے، ہمارا ختم نبوت پر اتنا ہی ایمان ہے جتنا کسی بھی مسلمان کا ہے۔

یہ خبر بھی پڑھیں: دھرنے والوں کی تعدادمیں اضافہ وزیراعظم کو رپوٹ دیدی گئی :ڈاکٹرمسعود شاہد

عدالتی کارروائی کے بارے میں گفتگو کرتے ہوئے وزیر داخلہ نے بتایا کہ سماعت کے دوران عدالت سے استدعا کی کہ کچھ وقت دیا جائے ہم عدالت کے حکم پر عملدر آمد کریں گے۔ عدالت نے جمعرات کو دوبارہ بلایا ہے اس لیے علماءاور مشائخ اس دھرنے کے خاتمے میں کردار ادا کریں ، عدالت میں بطور وزیر داخلہ خود پر ذمہ داری لی کیونکہ میں نہیں چاہتا کہ خون خرابہ ہو، اگلے 24 یا 48 گھنٹوں میں اس کا حل نکال لیں گے۔ہم نے عدالت کو یقین دہانی کرائی ہے کہ مستقبل میں کسی کو بھی دھرنا دینے کی اجازت نہیں دی جائے گی، مستقبل میں انتظامیہ کو صاف اور دوٹوک ہدایات دی جائیں گی کہ ایسی صورتحال پیدا نہ ہونے دے جس کی وجہ سے شہریوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑے۔

تحریک لبیک یارسول اللہ کا دھرنا،اسلام آباد ہائیکورٹ نے وفاقی وزیر داخلہ کو طلب کر لیا، احسن اقبال پیش ، 48 گھنٹوں کی مہلت مانگ لی

انہوں نے کہا کہ نبی کریم ﷺ کے پیروکاروں کے شایان شان نہیں ہے کہ وہ امت کو تکلیف پہنچائیں ،ختم نبوت ﷺ کا قانون پہلے سے زیادہ موثر ہوگیا ہے ملک میں خون خرابہ نہیں ہونا چاہیے تمام دفاعی یا حفاظتی اقدامات بروئے کار لائے جائیں گے کیونکہ ہمیں کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے نمٹنے کیلئے تیار رہنا ہوتاہے۔

وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ دھرنے والوں کی تصاویر ملک دشمن لابیز پاکستان مخالف پراپیگنڈے کیلئے استعمال کر رہے ہیں، اب ختم نبوت ﷺ کی خدمت نہیں ہورہی بلکہ اس دھرنے کی وجہ سے پاکستان کو بدنام کیا جا رہا ہے۔

مزید : قومی /اہم خبریں