نیب کسی سے انتقامی کارروائی کے لئے نہیں بنا، ملک میں بدعنوانی کا خاتمہ ہماری اولین ترجیح ہے: جسٹس(ر) جاوید اقبال

نیب کسی سے انتقامی کارروائی کے لئے نہیں بنا، ملک میں بدعنوانی کا خاتمہ ہماری ...
نیب کسی سے انتقامی کارروائی کے لئے نہیں بنا، ملک میں بدعنوانی کا خاتمہ ہماری اولین ترجیح ہے: جسٹس(ر) جاوید اقبال

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس(ر) جاوید اقبال نے کہا ہے کہ نیب کسی فرد ، صوبے یا جماعت سے انتقامی کارروائی کے لئے نہیں بنایا گیا بلکہ ملک سے بدعنوانی کا خاتمہ ہماری اولین ترجیح ہے کیوں کہ کرپشن سے پاک ملک آئندہ نسلوں کے بہتر مستقبل کی ضمانت ہے۔

اسلام آباد دھرنے کے خاتمے کے لئے پیر حسین الدین شاہ کی قیادت میں کمیٹی قائم ، ظفر الحق کمیٹی کی رپورٹ سامنے لائی جائے: علماءو مشائخ کے اجلاس میں مشترکہ اعلامیہ

قومی احتساب بیورو (نیب ) کے سربراہ جسٹس (ر) جاوید اقبال نے نیب لاہور کے بیورو آفس کا دورہ کیا ، اس موقع پر  چیئرمین  نیب جسٹس(ر) جاوید اقبال نے کہا ہے کہ ملک سے بدعنوانی کا خاتمہ نیب کی اولین ترجیح ہے، نیب کے کام میں تبدیلی کے علاوہ اب انصاف ہوتا ہوا نظر آئے گا، نیب کسی صوبے، پارٹی اور فرد سے انتقامی کارروائی کیلئے نہیں بنا بلکہ نیب بلاتفریق زیرو ٹالرنس کی پالیسی اپناتے ہوئے بدعنوان عناصر سے قوم کی لوٹی گئی رقم برآمد کرکے قومی خزانہ میں جمع کرانے کیونکہ ملک 84 ارب ڈالر کا مقروض ہے، اس لئے انتہائی قدم سے گریز نہیں کیا جائے گا اور بدعنوان عناصر کو قانون کے مطابق انصاف کے کٹہرے میں کھڑا کرنے پر یقین رکھتا ہے تاکہ عدالت مجاز، بدعنوان عناصر کو قانون کے مطابق سزا دے، نیب نے 179 میگا کرپشن کے مقدمات میں سے 96 مقدمات عدالت مجاز میں دائر کئے ہیں جبکہ 25 مقدمات میں انکوائری اور 25 مقدمات تفتیش کے مراحل سے گزر رہے ہیں جبکہ 33 میگا کرپشن مقدمات کو قانون کے مطابق منطقی انجام تک پہنچایا جا چکا ہے، اس کے علاوہ تمام ریجنل بیوروز سے تین ماہ کے اندر تمام بقیہ میگا کرپشن مقدمات پر قانون کے مطابق کارروائی کی رپورٹ طلب کی ہے، اس وقت نیب لاہور میں صرف ایک میگا کرپشن مقدمہ ہے جس کی وجہ سے نیب لاہور کی کارکردگی بہتر ہے۔

مزید : قومی /اہم خبریں