ہائی کورٹ نے کیپٹن (ر)صفدر کے خلاف اندراج مقدمہ کی انٹرا کورٹ اپیل نمٹادی

ہائی کورٹ نے کیپٹن (ر)صفدر کے خلاف اندراج مقدمہ کی انٹرا کورٹ اپیل نمٹادی
ہائی کورٹ نے کیپٹن (ر)صفدر کے خلاف اندراج مقدمہ کی انٹرا کورٹ اپیل نمٹادی

  



لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے سابق وزیر اعظم میاں محمدنواز شریف کے داماد کیپٹن (ر)صفدر کے خلاف اندراج مقدمہ کی انٹرا کورٹ اپیل نمٹاتے ہوئے درخواست گزار سے کہا کہ اسے داد رسی کے لئے سپیکر قومی اسمبلی سے رجوع کرنا چاہیے ۔

آئندہ 48گھنٹوں بعد موسلادھار اور کہیں درمیانے درجے کی بارش کا امکان

مسٹر جسٹس عبدالسمیع خان اور مسٹر جسٹس شہباز علی رضوی پر مشتمل دو رکنی بنچ نے ایم اے جوزف فرانسس کی انٹرا کورٹ اپیل پر سماعت کی جس میں پولیس کی جانب سے ایم این اے کیپٹن (ر)صفدر کے خلاف مقدمہ درج نہ کرنے کی نشاندہی کی گئی، اپیل کنندہ کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ کیپٹن ریٹائرڈ صفدر نے قومی اسمبلی میں اقلیتوں کے بارے میں نامناسب بیان دیا، ان کے الفاظ سے غیر مسلموں کی دل آزاری ہوئی ہے، درخواست گزار کے وکیل نے نکتہ اٹھایا کی کہ آئین کے تحت کسی طبقے کے خلاف نفرت انگیز تقریر نہیں کی جاسکتی، درخواست گزار کے وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ پولیس ممبر قومی اسمبلی کے خلاف مقدمہ درج نہیں کر رہی اور ہائیکورٹ کے سنگل بنچ نے بھی ممبر قومی اسمبلی کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست مسترد کر دی ہے ،سابق وزیر اعظم کے داماد کے خلاف اندراج مقدمہ کا حکم دیا جائے، سرکاری وکیل نے موقف اختیار کیا کہ کیپٹن (ر)صفدر کی تقرر اسلام آباد کا واقعہ اوراس کا مقدمہ لاہور میں درج نہیں ہوسکتا ،اپیل خارج کی جائے، عدالت نے درخواست نمٹاتے ہوئے درخواست گزار سے کہا کہ اسے داد رسی کے لئے سپیکر قومی اسمبلی سے رجوع کرنے چاہیے ۔

مزید : لاہور