ٹوئٹ کے الفاظ بڑھانے پرویب سائٹ کو تنقید کا سامنا

ٹوئٹ کے الفاظ بڑھانے پرویب سائٹ کو تنقید کا سامنا
ٹوئٹ کے الفاظ بڑھانے پرویب سائٹ کو تنقید کا سامنا

  



نیویارک(صباح نیوز)ٹوئٹر نے ویب سائٹ پر ٹوئٹ کے الفاظ بڑھاکر کمپنی نے خود اپنی انفرادیت کھودی۔

دبئی کے شاپنگ مالز میں الیکڑانک سگریٹ پینے پر 2000 درہم جرمانہ

غیر ملکی میڈیا کے مطابق الفاظ کی تعداد280 تک بڑھانے پر ٹوئٹر کو دنیا کے جانے مانے رائٹرز کی تنقید کا سامنا ہے۔جے کے رولنگ ، نیل گے مین اور سٹیفن کنگ جیسے بڑے رائٹر نے ٹوئٹس کے الفاظ کی حد بڑھنے کو اچھا اقدام قرار نہیں دیا۔ہیری پورٹر کی رائٹر جے کے رولنگ کا کہنا ہے کہ ٹوئٹس کے کم الفاظ ہی اس ویب سائٹ کی انفرادیت تھی۔ 280 الفاظ کی حد نے یہ انفرادیت ختم کرد ی اور ٹوئٹ کے الفاظ بڑھانے پر ٹوئٹرصارفین کی طرف سے بھی زیادہ اچھا تاثر نہیں آرہا ہے۔

مزید : سائنس اور ٹیکنالوجی