انٹیر یئرز پاکستان نمائش میں شرکت کے لیے غیر ملکی و فود کی آمد

انٹیر یئرز پاکستان نمائش میں شرکت کے لیے غیر ملکی و فود کی آمد

  



لاہور (لیڈی رپورٹر) چیف ایگزیکٹو پاکستان فرنیچر کونسل (پی ایف سی) میاں کاشف اشفاق نے کہا ہے کہ گیارہویں سہ روزہ انٹیریئرز پاکستان نمائش میں شرکت کے لیے چین، ترکی، تائیوان، تھائی لینڈ اور دیگر ممالک کے فرنیچر کی صنعت سے وابستہ وفود ایک ہفتے کے دورے پر پہنچنا شروع ہوگئے ہیں، نمائش 22 نومبر سے شروع ہوگی۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے منگل کو نمائش کے حتمی انتظامات کا جائزہ لیتے ہوئے کیا۔انھوں نے کہا کہ تمام غیر ملکی وفود کے بورڈنگ، قیام اور سفر کے اخراجات پی ایف سی برداشت کر رہی ہے اور ان کی سہولت کے لیے غیر معمولی انتظامات کیے گئے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ان وفود کو دعوت دینے کا بنیادی مقصد غیر ملکی سرمایہ کاروں اور درآمد کنندگان کو ملکی ہاتھ سے تیار کردہ لکڑی کی بہترین فرنیچر مصنوعات سے متعارف کرانا ہے۔معلومات تک فوری رسائی کو یقینی بنانے کے لیے پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا کے لیے خصوصی ڈیسک قائم کیا گیا ہے۔ میاں کاشف نے کہا کہ صف اول کی 100 سے زائد مقامی کمپنیاں اور انٹیریئر ڈیزائنرز اس موقع پر اپنی مصنوعات کی نمائش کریں گے اور امید ہے کہ دو سے اڑھائی لاکھ افراد اس میگا نمائش کو دیکھنے کیلئے آئیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ نمائش نوجوان ڈیزائنرز اور آرکیٹیکٹس کو مارکیٹ کے رجحانات سے آگاہی اور بڑے پروفیشنلز کے ساتھ رابطے اور اپنی مصنوعات کی نمائش کا موقع فراہم کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ پی ایف سی مزید ممالک تک پاکستانی فرنیچر مصنوعات کی رسائی کو یقینی بنانے اور پاکستانی فرنیچر ڈیزائنرز اور صنعت کاروں کے لئے فوکل پوائنٹ کی حیثیت سے کام جاری رکھنے کیلئے پر عزم ہے۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی لکڑی کی صنعت بہت ترقی یافتہ اور ملک کی 95 فیصد فرنیچر مارکیٹ کا احاطہ کرتی ہے اور یہ بات یقینی ہے کہ جدت، سرمایہ کاری اور حکومتی سرپرستی میں اضافہ کرکے فرنیچر کی صنعت روزگار کے مزید مواقع اور ملکی آمدنی میں اضافہ کرسکتی ہے۔

مزید : کامرس