آلودگی: بھٹے بند، دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کیخلاف آپریشن کافیصلہ

    آلودگی: بھٹے بند، دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کیخلاف آپریشن کافیصلہ

  



 ملتان (نیوز رپورٹر)صوبائی وزیر برائے ماحولیات محمد رضوان نے کہا ہے آلودگی سے پاک ماحول حکومت کی اولین ترجیح ہے. آج سے پہلے کسی حکومت نے صاف ماحول اور شجرکاری مہم کو قومی پالیسی کا حصہ نہیں بنایا. وزیراعظم عمران خان کے وڑن کے مطابق ماحولیاتی تبدیلی اور شجرکاری مہم پر کام کر رہے ہیں. ان خیالات کا اظہار وزیر ماحولیات محمد رضوان نے انسدادِ سموگ کارروائی بارے جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیاصوبائی وزیر ماحولیات محمد رضوان نے کہا کہ ائیر کوالٹی انڈکس کو پورا سال (بقیہ نمبر37صفحہ7پر)

مانیٹر کرنا چاہیے.لیڈ بیٹریوں کو جلانیوالی بھٹیوں کو فوری مسمار کیا جائے کیونکہ اس کے ذرات ہوا کا حصہ بن جاتے ہیں اور کینسر جیسے موضی امراض کا سبب بنتے ہیں. انہوں نے کہا کہ دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کیخلاف بھرپور کریک ڈاؤن کیا جائے. تمام خشت بھٹہ جات زگ زیگ ٹیکنالوجی پر منتقل کیے جائیں. حکومت پنجاب کی جانب سے صوبہ بھر کے تمام بھٹہ جات کو بند نہ کرنے کا اہم فیصلہ کیا گیا ہے. صرف ریڈ زون میں شامل خشت  بھٹہ جات کو بند کیا جائے گا. اسطرح ملتان اور خانیوال کے بھٹہ جات کو بھی بند کیا جائے گا. صوبائی وزیر نے کہا کہ آنے والی نسل کی صحت کی قیمت پر کوء کاروبار قبول نہیں کیا جاسکتا. آلودگی بارے بھرپور آگاہی مہم بھی چلائی جائے جبکہ ناقص پیٹرول و ڈیزل بیچنے والوں کیخلاف بھی شکنجہ سخت کیا جائے. اس موقپر کمشنر ملتان ڈویڑن افتخار علی سہو نے کہا کہ انسداد سموگ بارے  ڈویڑنل ٹاسک فورس کی کارکردگی از خود مانیٹر کر رہا ہوں.ملتان ڈویڑن کو سموگ فری ریجن بنانے کیلئے ہنگامی اقدامات کیے گئے ہیں. اسوقت ملتان میں ائیر کوالٹی انڈکس 142 ہے. جبکہ ڈویڑن میں 69 بھٹہ جات پر مقدمات بھی درج کروائے جاچکے ہیں.182 گاڑیاں ضبط،2118 دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کو 7 لاکھ سے زائد کے جرمانے بھی کئے گئے ہیں جبکہ کوڑا،فصلوں کی باقیات، پلاسٹک، ٹائرز جلانے پر چالان کئے جارہے ہیں.اس موقع پر ڈی جی محکمہ ماحولیات تنویر وڑائچ، ایس ایس پی آپریشنز کاشف اسلم، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرز قمر الزمان قیصرانی، ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ ارشد گوپانگ، اسسٹنٹ کمشنر خواجہ عمیر اور دیگر متعلقہ محکموں کے سربراہان جبکہ ویڈیو لنک پر ڈپٹی کمشنرز و افسران بھی موجود تھے۔

گاڑیاں 

مزید : ملتان صفحہ آخر