سندھ کابینہ قبلہ درست کرلے،میرے پاس دیگر آپشن بھی موجود ہیں:بلاول

سندھ کابینہ قبلہ درست کرلے،میرے پاس دیگر آپشن بھی موجود ہیں:بلاول

  



کراچی(آن لائن)چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری سندھ حکومت کے وزرا ء کی کارکردگی پر برہم‘کابینہ میں ردو بدل کا عندیہ دیدیا۔تفصیلات کے مطابق  پیپلزپارٹی کی قیادت نے سندھ میں کارکردگی کو لیکر سرجوڑ لئے،پارٹی چیئرمین بلاول بھٹو کی زیرصدارت صوبائی حکومت کے وزرا ء کے دو الگ الگ اجلاس ہوئے۔ ایک اجلاس میں وزیراعلیٰ مراد علی شاہ، فریال تالپور، سپیکرآغا سراج درانی، مرتضیٰ وہاب اورناصر حسین شاہ شریک تھے،اس اجلاس میں سندھ کابینہ ارکان کی کارکردگی کا جائزہ لیا گیا۔جبکہ دوسرے اجلاس میں وزیراعلیٰ سندھ،صوبائی وزرا، مشیر ومعاونین خصوصی شریک تھے‘اجلاس کے دوران بلاول بھٹو زرداری نے وزراء کی ناقص کارکردگی پر اظہار ناراضگی کیا‘بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ مجھے عوام وکارکنان اور ارکان اسمبلی سے شکایات ملی ہیں، وزرا ء اگردفاتر میں نہیں ہوں گے تو مسائل کیسے سنیں گے؟ پہلے بھی کہا تھا وزرا ء اور ارکان اسمبلی کی کارکردگی پر نظر رکھوں گا۔ذرائع کے مطابق انہوں نے سندھ کابینہ کی کارکردگی پرعدم اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میں سندھ کابینہ کی کارکردگی سے مطمئن نہیں ہوں، کابینہ ارکان کارکردگی کو بہتربنائیں۔ انہوں نے وزیر بلدیات‘ ٹرانسپورٹ اور محکمہ جیل خانہ جات کے محکموں کی کارکردگی کو ہدفِ تنقید بنایا۔ ذرائع کے مطابق بلاول بھٹوزرداری نے بعض وزرا کو نام لے کر وارننگ بھی دی۔بلاول بھٹو نے بلدیات اور صحت کے محکموں کی کارکردگی پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ سیاسی جدوجہد کو وزرا کی خراب کارکردگی متاثر کر رہی ہے۔انکا کہنا تھاکہ کوئی کارکن کارکردگی نہیں دکھائے گا تو دیگر آپشنزموجود ہیں کابینہ میں ایسے لوگوں کو موقع دیا جاسکتا ہے جو کارکردگی دکھائیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ صاحب اپنے وزرا کی کارکردگی کو بہتربنائیں، جس پر وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ جی بالکل کابینہ کارکردگی کی ذمہ داری مجھ پرعائد ہوتی ہے۔ چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ وزرا ء کو پیپلزپارٹی منشور کی فکر ہے نہ پارٹی امیج کا خیال ہے۔ انہوں نے کابینہ کے ارکان کو وراننگ دی کہ اپنا قبلہ درست کرلیں، میرے پاس بہت آپشن ہیں، زیادہ برداشت نہیں کرسکتا۔

بلاول بھٹو

مزید : صفحہ اول