اشتہاریوں کو گرفتار کرنے میں کوئی کسرنہ چھوڑی جائے، ڈی پی او کوہاٹ 

اشتہاریوں کو گرفتار کرنے میں کوئی کسرنہ چھوڑی جائے، ڈی پی او کوہاٹ 

  



کوھاٹ (بیورو رپورٹ) ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر کوہاٹ کیپٹن(ر)واحد محمود نے علاقائی امن اور انسداد جرائم پر خصوصی توجہ مرکوز کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے واضح کردیا ہے کہ تھانوں کی سطح پر شفافیت کو یقینی بنا کر منظم جرائم پیشہ گروہوں اور سنگین جرائم میں ملوث مجرموں کے خلاف سخت کریک ڈاؤن یقینی بنایا جائے۔ مجرمانہ سرگرمیوں میں ملوث اشتہاریوں کی گرفتاری کیلئے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں۔منشیات فروشوں،قمار بازوں،سود خوروں،ہوائی فائرنگ کرنیوالوں اور دیگر معاشرتی جرائم کے مرتکب عناصر کیساتھ سختی سے نمٹا جائے۔وہ اپنے دفتر میں امن وامان کے قیام، مجرمانہ سرگرمیوں کی انسداداور پبلک پولیسنگ کے حوالے سے پولیس افسران کے اعلیٰ سطحی اجلاس سے خطاب کررہے تھے۔اجلاس کے دوران زیر تفتیش مقدمات کو عدالتوں میں کامیابی سے ہمکنار کرنے کی خاطر کثیر الجہتی حکمت عملی اپنانے اور درپیش چیلنجز سے بہتر طور پر نبردآزما ہونے کیلئے پولیس فورس کی ذمہ داریوں کا تعین کرتے ہوئے مشترکہ اور ہمہ گیر پالیسی وضع کرلی گئی ہے۔اجلاس میں پولیس کی استعداد کار،کمیونیکیشن سٹرٹیجی، مفاد عامہ اور مقدمات کی تفتیشی امورپر تفصیلی غور کیا گیا۔اجلاس کے دوران ضلع بھر میں امن وامان کی مجموعی صورتحال اورکاؤنٹر کرائمز کے حوالے سے مقامی پولیس کی کارکردگی پر نظر ثانی کی گئی اور گزشتہ سالوں کی نسبت امسال جرائم کی شرح کا تقابلی جائزہ لیتے ہوئے اس حوالے سے مؤثر تجاویز پیش کی گئیں۔ ڈی پی اوکوہاٹ کیپٹن(ر)واحد محمود نے پولیس افسران پر دو ٹوک الفاظ میں واضح کردیا کہ صوبائی پولیس سربراہ ڈاکٹر محمد نعیم خان کے احکامات کی روشنی میں ضلع بھر میں منظم جرائم پیشہ گروہوں اور سنگین جرائم میں ملوث مجرموں کے خلاف سخت کریک ڈاؤن یقینی بنایا جائے۔خاص طور پر ان مگر مچھوں پر مضبوط ہاتھ ڈالا جائے جو مختلف مافیا کے سرغنے ہیں ان میں باالخصوص قبضہ گروپوں کے وہ عناصر جو لینڈ مافیا میں ملوث ہیں۔ڈرگ مافیا بالخصوص وہ مجرم جو آئس جیسے خطرناک ڈرگ کی تیاری اور نئی نسل کواس لعنت میں مبتلا کرنے میں ملوث ہیں۔سود خور و بھتہ خور جنہوں نے شریف شہریوں کی زندگی اجیرن کردی ہے اور ٹمبر مافیا جو جنگلات کی بے دریغ کٹائی اور لکڑی سے غیر قانونی مال وزر کمانے کے ساتھ ساتھ ماحولیات کو غیر محفوظ بنانے میں غیر معمولی مذموم کردار ادا کررہے ہیں۔ڈی پی او کوہاٹ کیپٹن(ر)واحد محمود نے اجلاس میں شریک پولیس افسران کو ہدایت کی کہ خفیہ ایجنسیوں کی رپورٹس کی روشنی میں ان سرگرمیوں میں ملوث خطرناک مجرموں کی پولیس رولز کے مطابق باقاعدہ پرسنل فائل تیار کی جائیں جن میں انکی پروفائل،جرائم کی تفصیل،انکے خلاف زیر تفتیش مقدمات کی تعداد،انہیں ماضی میں ملنے والی سزاؤں اور انکے خلاف عوامی شکایات پر مبنی ریکارڈ تیار کیا جائے۔ اجلاس میں ایس پی آپریشنز کوہاٹ طاہر اقبال،ایس پی انوسٹی گیشن کوہاٹ عبدالحئی،اے ایس پی صدر سرکل دانیال احمد جاوید،ڈی ایس پی سٹی عالم زیب،ڈی ایس پی ہیڈ کوارٹرصنوبر شاہ اور ڈی ایس پی لاچی فضل واحد کے علاوہ تمام تھانوں کے ایس ایچ اوز اور دیگر متعلقہ پولیس افسران بھی موجود تھے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر