چارسدہ میں منظم قبضہ مافیا نے شہری کی زندگی اجیرن کردی

    چارسدہ میں منظم قبضہ مافیا نے شہری کی زندگی اجیرن کردی

  



چارسدہ (بیو رو رپورٹ) منظم قبضہ مافیا نے شہری کی زندگی اجیرن بنا دی۔ وراثتی زمین ہتھیانے کے لئے خانمائی پولیس کے آشیر باد سے ہماری غیر موجودگی میں گھر پر لشکر کشی کرتے ہوئے گولیوں کی بوچھاڑ کردی۔ پولیس نے مدعی سست گواہ چست کا مظاہرہ کرتے ہوئے ہمیں الٹا حوالات میں بند کر کے قانون و انصاف کی دھجیاں بکھیر دی۔ شہری ساجد کا اپنے حجرے میں ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب۔ تفصیلات کے مطابق تھانہ خانمائی کے حدود تو ت کے کے شہری ساجد ولد امیر زادہ نے ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ عدالت میں زیر سماعت مقدمے میں مخالف فریق خورشید، انور و دیگر نے زبردستی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ہماری وراثتی زمین پر قبضہ جمانے کیلئے لشکر کشی کرتے ہوئے ہماری فصل کو ہل چلا کر برباد کیا اور ہمارے گھر پر گولیوں کی بوچھاڑ کردی۔ اس حوالے سے جب ہم تھانہ خانمائی میں انصاف کی حصول اور قانون کی پاسداری کے لئے گئیں تو پولیس نے اول تو ٹال مٹول سے کام لیا اور بعد ازاں ہمارے مخالفین سے راز باز کے تحت ہمیں حوالات میں بند کرکے جھوٹے مقدمے پھنسا دیا اور ناکردہ گناہ کی پاداش میں ہمیں جیل کاٹنا پڑا۔ ساجد نے ڈی پی او چارسدہ، آئی جی مر دان،گورنر،وزیر اعلی سمیت متعلقہ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ ہمیں انصاف فراہم کی جائے اور ہمارے مخالفین قبضہ مافیا گینگ کیخلاف کارروائی کی جائے بصورت دیگر ہم اہل عیال سمیت احتجاجی مظاہروں سے دریغ نہیں کرینگے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر