سندھ ہائیکورٹ نے دہرے قتل کے مجرموں کو 17 سال بعد بری کردیا

سندھ ہائیکورٹ نے دہرے قتل کے مجرموں کو 17 سال بعد بری کردیا
سندھ ہائیکورٹ نے دہرے قتل کے مجرموں کو 17 سال بعد بری کردیا

  



کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)سندھ ہائیکورٹ نے دہرے قتل کے مجرموں کو 17 سال بعد بری کردیا،عدالت نے ٹرائل کورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے مجرموں کو جیل سے رہا کرنے کا حکم دیدیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائیکورٹ میں دہرے قتل کے مجرموں کی سزائے موت کیخلاف اپیل پر سماعت ہوئی،عدالت نے دہرے قتل کے جرم میں سزائے موت کے خلاف اپیل منظورکرلی،عدالت نے تاج محمد اور بصیر17 سال بعد بری کردیا اور ٹرائل کورٹ کا سزائے موت کا فیصلہ کالعدم قراردیدیا، عدالت نے تاج محمد اور بصیر کو جیل سے رہا کرنے کا حکم دیدیا۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی