ریاست کو بھی بچوں کے ساتھ ہونے والے واقعات کی پرواہ نہیں کررہی ،اسلام آبادہائیکورٹ،مدرسے کے بچے سے مبینہ زیادتی کے ملزم کی درخواست ضمانت مسترد

ریاست کو بھی بچوں کے ساتھ ہونے والے واقعات کی پرواہ نہیں کررہی ،اسلام ...
ریاست کو بھی بچوں کے ساتھ ہونے والے واقعات کی پرواہ نہیں کررہی ،اسلام آبادہائیکورٹ،مدرسے کے بچے سے مبینہ زیادتی کے ملزم کی درخواست ضمانت مسترد

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آبادہائیکورٹ نے بارہ کہومدرسے میں بچے سے مبینہ زیادتی کے کیس میں ملزم ذیشان کی درخواست ضمانت مستردکردی، چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ طیبہ تشدد کیس ہمارے لئے مثال ہے لیکن وہ ایک ہے جو سامنے آگیا ،بچوں کے ساتھ اس قسم کے واقعات ہمارے معاشرے میں زیادہ ہو رہے ہیں ،ریاست بھی بچوں کے ساتھ ہونے والے ایسے واقعات کی پرواہ نہیں کررہی ۔

تفصیلات کے مطابق اسلا م آبادہائیکورٹ میں بارہ کہومدرسے میں بچے سے مبینہ زیادتی کے کیس میں ملزم ذیشان کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی،پولیس نے عدالت میں بیان دیا کہ بارہ کہو مدرسے کے قاری کو گرفتارکرلیاگیا،ڈی آئی جی وقارالدین سیدنے کہا کہ تفتیشی افسر کو ہٹا کر شوکارنوٹس جاری کردیاگیا ۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ طیبہ تشدد کیس ہمارے لئے مثال ہے لیکن وہ ایک ہے جو سامنے آگیا،بچوں کے ساتھ اس قسم کے واقعات ہمارے معاشرے میں زیادہ ہو رہے ہیں ،چیف جسٹس اسلام آبادہائیکورٹ نے کہا کہ پولیس کی تفتیش کا کوئی حال نہیں ہمیں بتائیں کیسے بہتری آئے گی ؟ریاست بھی بچوں کے ساتھ ہونے والے ایسے واقعات کی پرواہ نہیں کررہی ۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد