یہ نوجوان لڑکی انٹرنیٹ پر کیا کام کر کے روزانہ 30 لاکھ روپے کماتی ہے؟ جان کر آپ کو یقین نہیں آئے گا

یہ نوجوان لڑکی انٹرنیٹ پر کیا کام کر کے روزانہ 30 لاکھ روپے کماتی ہے؟ جان کر آپ ...
یہ نوجوان لڑکی انٹرنیٹ پر کیا کام کر کے روزانہ 30 لاکھ روپے کماتی ہے؟ جان کر آپ کو یقین نہیں آئے گا

  



کنبرا(مانیٹرنگ ڈیسک)سوشل میڈیا آج باہم رابطے سے آگے بڑھ کر کمائی کا ایک بڑا ذریعہ بن چکا ہے اور لوگوں اس کے ذریعے کروڑوں روپے کما رہے ہیں۔ اب اس جیم وولفی نامی آسٹریلوی لڑکی ہی کو دیکھ لیں جس کا دعویٰ ہے کہ وہ اپنے انسٹاگرام اکاﺅنٹ کے ذریعے روزانہ 30ہزار ڈالر (تقریباً 46لاکھ 84ہزار روپے)کما رہی ہے۔ وہ بکنی (خواتین کا پیراکی کا لباس)پہن کر انسٹاگرام اکاﺅنٹ پر تصاویر پوسٹ کرتی ہے اور ان کے ذریعے رقم کماتی ہے۔

28سالہ جیم وولفی کے انسٹاگرام اکاﺅنٹ پر27لاکھ سے زائد فالوورز ہیں۔ اونلی فینز (OnlyFans) پیج پر اسے 10ہزار سے زائد لوگوں نے سبسکرائب کر رکھا ہے اور اس کا کہنا ہے کہ وہ ان اکاﺅنٹس سے اب تک 20لاکھ ڈالر کما چکی ہے۔اونلی فینز پیج پر اس کا ہر سبسکرائبر اس کی تصاویر دیکھنے کے لیے ماہانہ 15ڈالر فیس ادا کرتا ہے۔

جیم وولفی سوشل میڈیا سٹار بننے سے قبل فل ٹائم شیف کی نوکری کرتی تھی اور باسکٹ بال کی بہترین کھلاڑی تھی۔ لاس اینجلس میں پوڈکاسٹ ’نوجمپر‘ میں گفتگو کرتے ہوئے جیم وولفی کا کہنا تھا کہ ”اگرچہ میں کامیاب سوشل میڈیا انفلوئنسر ہوں لیکن آسٹریلیا میں سوشل میڈیا انفلوئنسرز کی عزت نہیں ہے۔ وہاں لوگ اسے پیشہ ہی نہیں سمجھتے اور ہم پر ہنستے ہیں۔ جب بھی میری کوئی خبر شائع ہوتی ہے تو کمنٹس سیکشن میں افسوسناک کمنٹس پڑھنے کو ملتے ہیں جیسا کہ ’ہمیں یہ سوچ کر شرمندگی ہوتی ہے کہ تم آسٹریلوی شہری ہو۔‘ مجھے امید ہے کہ جلد آسٹریلیا میں بھی لوگ اسے حقیقی پیشہ سمجھنے لگیں گے اور سوشل میڈیا سٹارز کی عزت کرنے لگیں گے۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس