پیپلزپارٹی سے سیاسی انتقام لیاجارہاہے، الزام پر جیل میں رکھنا ہے تو علیمہ باجی، پرویز خٹک سمیت سب کو جیل میں رکھو: سعید غنی

پیپلزپارٹی سے سیاسی انتقام لیاجارہاہے، الزام پر جیل میں رکھنا ہے تو علیمہ ...
پیپلزپارٹی سے سیاسی انتقام لیاجارہاہے، الزام پر جیل میں رکھنا ہے تو علیمہ باجی، پرویز خٹک سمیت سب کو جیل میں رکھو: سعید غنی

  



کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)سابق صدر آصف علی زرداری کو ذاتی معالج سے علاج کی سہولت نہ دینے اور وفاقی حکومت کی پالیسیوں کے خلاف پیپلز پارٹی نے کراچی پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا،مظاہرے میں خواتین کارکنوں کی بھی بڑی تعداد میں شرکت،وفاقی حکومت مخالف نعرے بازی نے جیالوں کا لہو گرما دیا ۔

تفصیلات کے مطابق پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری کو علاج کی سہولیات نہ ملنے،پیپلزپارٹی کی اسیرقیادت کے خلاف انتقامی کارروائیوں کے تحت مقدمات اوربڑھتی ہوئی مہنگائی کےخلاف ہونےوالےاحتجاجی مظاہرے سےخطاب کرتےہوئے پارٹی کےسینئررہنمااورصوبائی وزیر اطلاعات سندھ سعید غنی نےکہاکہ آصف زر داری اور فریال تالپور کا ابھی تک ٹرائل شروع ہی نہیں ہوا تاہم جو سلوک ہو رہا ہے وہ تو دہشتگردوں کے ساتھ بھی نہیں ہوتا،آصف زرداری اور فریال تالپور کو مناسب سہولیات فراہم نہیں کی جارہیں،آصف زرداری کے موقف کو تبدیل کرنے کی کوشش کی جارہی ہے، ماضی میں بھی ایسی کوششیں کی جاتی رہیں جو کامیاب نہیں ہوسکیں،جو قانون علیمہ خان کے لئے ہے وہی فریال تالپور کے لئے بھی ہونا چاہیے۔اُنہوں نے کہا پاکستان کی تاریخ میں کوئی ایک بھی ایسا مقدمہ نہیں ملتا کہ جرم ایک صوبے میں ہوا ہو اور مقدمہ کسی اور صوبے میں چلے،سمجھ نہیں آتی کہ پیپلز پارٹی کے ساتھ ہی ایسا کیوں ہوتا ہے؟شہید بھٹو کے ساتھ بھی ایسا ہی ہواتھا،یہ جو کچھ بھی ہو رہا ہے اسی تاریخی غلطی کا تسلسل ہے۔

اُنہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی کے وزرا پر بھی الزامات ہیں لیکن گرفتاری کسی کی نہیں ہوتی، پیپلز پارٹی کے رہنماؤں کو صرف نوٹس ہوتا ہے اور ساتھ ہی گرفتاری ہو جاتی ہے، احتساب کے نام پر ڈرامہ ہورہا ہے،ہم عدالتوں کے فیصلوں کا احترام کرتے ہیں لیکن عدالتیں بھی آئین کے اندر رہتے ہوئے فیصلے دینے کی پابند ہیں۔اُنہوں نے کہاکہ آج کا احتجاجی مظاہرہ حکمرانوں کو واضح پیغام ہے،ہم جو کہتے ہیں کسی کو یہ بات اچھی نہ لگے مگر چیف جسٹس نے بھی یکساں احتساب کا ذکر کیا ہے،ہم کراچی میں آصف علی زرداری اور فریال تالپور خورشید شاہ سمیت دیگر پارٹی رہنماؤں کے لیے ریلیف لینے نہیں انصاف لینے کے لیے جمع ہوئے ہیں انصاف اور احتساب کا پیمانہ تفتیش سے قبل نہیں بعد کا ہوتا ہے،اگرصرف الزام پر جیل میں رکھنا ہے تو علیمہ باجی، پرویز خٹک سمیت سب کو جیل میں رکھو۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی