پاک ایکسپو کے دوران معاہدے 14 ملین ڈالر کے معاہدے متوقع 

      پاک ایکسپو کے دوران معاہدے 14 ملین ڈالر کے معاہدے متوقع 

  

لاہور(پ ر) صوبائی دارالحکومت میں حال ہی میں منعقد ہونے والی پاکستان انڈسٹریل ایکسپو 2020ء کے دوران ہونے والی میٹنگز کے نتیجہ میں پاکستانی اور چینی صنعت کاروں کے درمیان  14 ملین ڈالر کے معاہدے متوقع ہیں۔ یہ ایکسپو کا چوتھا ایڈیشن تھا جس کا اہتمام ایورسٹ انٹرنیشنل نے کیا جو پاکستان اور چین کے تاجروں کے مابین پل کا کردار ادا کرنے کے ساتھ ساتھ بیرون ممالک بالخصوص چین کی جانب سے سرمایہ کاری اور ٹیکنالوجی کو راغب کرنے کیلئے کوشاں ہے۔تین روزہ ایونٹ میں 2000 سے زائد پروفیشنل پاکستانی کاروباری شخصیات نے شرکت کی۔ ایونٹ کے دوران 448 اجلاسوں کا انعقاد ہوا جن میں چین سے نمائش کنندگان نے پاکستانی کلائنٹس کے ساتھ B2B میٹنگز میں شمولیت اختیار کی۔ متعدد چیمبرز اور ایسوسی ایشنوں نے اپنے وفود کے ہمراہ ایونٹ میں شرکت کی جن میں کنٹریکٹر ایسوسی ایشن آف پاکستان، ساہیوال چیمبر، سرگودھا چیمبر، صوابی چیمبر، ہارڈ ویئرڈ مرچنٹس آف پاکستان، چکوال چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری، پشاور چیمبر اور کامرس اینڈ انڈسٹری شامل ہیں۔ یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایونٹ کا آغاز جدید ماڈل ”آن لائن + آف لائن“ پر کیا گیا۔ تمام نمائشیں فزیکلی طور پر دکھائی گئیں اور تمام B2B میٹنگز آن لائن ٹرمینل ایکوئپمنٹس کے ذریعے منعقد کی گئیں جو ہر بوتھ پر نصب تھے۔ آرگنائزر نے ایونٹ کے دوران ایس او پی پر عمل کیا، سینیٹائزیشن گیٹ لگائے گئے، ہر بوتھ پر سپریئر، ٹمپریچر ٹیسٹر اور الکحل سے گیلے کئے گئے ٹشوز اور سینیٹائزر کا انتظام کیا گیا۔ صدر پاکستان چائنہ جوائنٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری ایس ایم نوید نے ایونٹ کا افتتاح کیا اور شاندار شو کے انعقاد پر پاکستان میں کام کرنے والے چینی کاروباری شخصیات کو سراہا جس میں دونوں ممالک کی صلاحیتوں کو پیش کیا گیا۔ ایورسٹ انٹرنیشنل کے سی ای او یوسف فا نے اس موقع پر کہا کہ انہوں نے باہمی تجارتی تعلقات کو مزید مضبوط بنانے کے لئے پاکستان میں اس نمائش کا آغاز کیا اور اس سے دونوں اطراف کی مقامی صنعتوں کو مزید فروغ دینے میں مدد ملے گی اور اس سے مستقبل میں پاکستان کو بھی بہت زیادہ فائدہ حاصل ہوگا اس کا انعقاد بہت خوش آئند بات ہے۔ 

مزید :

کامرس -