بروقت بلدیاتی انتخابات نہ کرانابددیانتی ہے،کاشف سعید 

بروقت بلدیاتی انتخابات نہ کرانابددیانتی ہے،کاشف سعید 

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)جماعت اسلامی سندھ کے جنرل سیکریٹری کاشف سعید شیخ نے کہا ہے کہ جمہوریت کی دعویدارحکومتوں کی جانب سے بروقت بلدیاتی انتخابات نہ کراناحکومتی بددیانتی اورعوامی حقوق پرڈاکہ کے مترادف ہے۔دنیا کے تمام جمہوری ممالک میں بلدیاتی اداروں کا ایک جامع نیٹ ورک موجود ہے،ان اداروں کو جمہوریت کی نرسری قرار دیا جاتا ہے۔ پاکستان میں بلدیاتی ادارے جنرل ایوب خان،جنرل ضیاع الحق ؒ اور پرویز مشرف کے دور آمریت میں بھی بلدیاتی ادارے قائم رہے اور عوام کے گلی محلوں کے کام ہوتے تھے لیکن افسوس کہ جب بھی ملک میں جمہوری حکومتیں قائم ہوئی سب سے پہلے بلدیاتی انتخابات کروانے میں دیر اور انہیں بے اختیار کرنے کی ہر ممکن کوشش کی گئی، سندھ میں پیپلزپارٹی کی جانب سے سابق بلدیاتی ادارے اس کا منہ بولتا ثبوت ہیں جبکہ کراچی،حیدرآباد کے علاوہ پورے سندھ میں پیپلزپارٹی کے نمائندے منتخب ہوئے لیکن انہیں بے بھی اختیار کیا گیا۔ انہوں نے آج ایک بیان میں مزید کہا کہ جماعت اسلامی نے عبدالستار افغانی اور نعمت اللہ خان کی صورت میں کراچی میں بلدیاتی انتخابات میں کامیابی اور اپنے میئر شپ کے دور میں کراچی کے عوام کی بہترین خدمت کی جس کا اعتراف ہمارے بدترین مخالفین بھی کرتے ہیں۔پرویزمشرف کے بعد بلدیاتی اداروں میں من پسند ترامیم کرکے انتخابات کروائے گئے تاہم اراکین قومی و صوبائی اسمبلی اور بلدیاتی ممبران کے درمیان انتظامی اور مالی اختیارات کی رسہ کشی جاری رہی۔بلوچستان میں بلدیاتی ادارے اپنی چار سالہ مدت پوری کرکے جنوری 2019، پنجاب اور خیبر پختونخوا کے بلدیاتی ادارے اگست 2019کو تحلیل ہوچکے ہیں جبکہ سندھ میں بھی 30اگست کو اپنی مدت ختم کرچکے ہیں اور تمام صوبائی حکومتوں نے اپنے من پسند اور پارٹی ورکرز کو ایڈمنسٹریٹر مقرر کرکے شہری اداروں کے وسائل کی بندربانٹ جاری رکھے ہوئے ہیں اور کراچی سمیت تمام بڑے شہر کچرے کے ڈھیر،سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں، کراچی میں حالیہ طوفانی بارشوں کے بعد آج تک خستہ حال سڑکوں کی تاحال مرمت نہ ہونا سندھ حکومت اور ایڈمنسٹریٹر کراچی کی نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -