کاٹن کے غیر معیاری بیج بنانیوالوں کیخلاف سخت ایکشن کیلئے قانون سازی کرینگے: گورنر پنجاب 

  کاٹن کے غیر معیاری بیج بنانیوالوں کیخلاف سخت ایکشن کیلئے قانون سازی ...

  

 لاہور(نمائندہ خصوصی) کاٹن کے نئے اور میعاری بیج کی تیاری اور ریسر چ کے معاملہ پرگور نر پنجاب چوہدری محمدسرور اور وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدارکی زیر صدارت گور نر ہاؤس میں اجلاس ہوا جس میں غیر معیاری بیج بنانیوالوں کو سخت سزائیں دلانے کیلئے قانون سازی کرنے اورنئے بیج کی تیاری اور ریسرچ کے لئے امر یکہ اور چین کے ریسرچرزسے بھی مددلینے کا فیصلہ کیا گیا۔ اجلاس میں صوبائی وزیر حسنین جہانیاں گردیزی کی سر براہی میں 10رکنی کمیٹی قائم کی گئی جو بیج کی تیاری اور ریسرچ کے حوالے سے کام کر یگی اور اس کمیٹی کا ہر ہفتے اجلاس ہوگا جبکہ کمیٹی کے اراکین ہر 15دن بعدگور نر اوروزیرا علی سے ملاقات کرکے آئندہ کی حکمت طے کر یں گے جبکہ کمیٹی میں پر ائیوٹ سیکٹر کے لوگوں کو بھی شامل کیا گیا ہے۔ میڈیا کو بر یفنگ دیتے ہوئے گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نے بتایا کہ صوبے کی زرعی یونیورسٹیز کو نئے بیج پر ریسرچ تیز کر نے کا ٹارگٹ دیا ہے اور ان سے ہر ماہ رپورٹ بھی لی جائے گی۔ غیر معیاری بیج بنانیوالوں کیخلاف سخت ایکشن کے لیے پنجاب میں قانونی سازی بھی کی جائیگی جسکے لیے فوری طور پر ہوم ورک کا آغاز کر دیا ہے اور آج پہلی بار اس نئے بیج کی تیاری اورریسرچ سمیت دیگر معاملات کے حوالے سے وفاقی وصوبائی حکومت اور پر ائیوٹ سیکٹر ایک پیج پرآچکا ہے۔ اْنہوں نے کہا کہ حکومت زراعت کے شعبے کی ترقی کے لیے تمام وسائل بیروکار لائے گی۔ غیر میعاری بیج فراہم کر نیوالے رعایت کے مستحق نہیں یہ ملکی ترقی کے بھی دشمن ہیں۔ وزیر اعلی عثمان بزدار نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کاٹن کے نئے بیج کی تیاری اور ریسرچ کیلئے صوبائی حکومت تمام وسائل بیروکار لائے گی۔ جب وفاق، پنجاب اور پر ائیوٹ سیکٹر ملکر کام کر یں گے تو یقینی طورپر بہتری آئیگی۔وفاقی وزیر فخر امام نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ پاکستان میں کاٹن کی پیدار بھارت کے مقابلے میں زیادہ ہونی چاہیے۔ 

گورنر پنجاب

مزید :

صفحہ آخر -