شاہد خاقان عباسی کی عدالتی  کارروائی براہ راست نشرکرنے  کی درخواست مسترد

  شاہد خاقان عباسی کی عدالتی  کارروائی براہ راست نشرکرنے  کی درخواست مسترد

  

  اسلام آباد (این این آئی)احتساب عدالت کے جج محمد اعظم خان کی عدالت میں زیر سماعت سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی وغیرہ کیخلاف ایل این جی ریفرنس میں گواہ کا بیان مکمل نہ ہو سکا جبکہ عدالت نے سابق وزیر اعظم کی طرف سے عدالتی کاروائی براہ راست نشر کرنے کی درخواست مسترد کردی۔احتساب عدالت اسلام آباد کے جج محمد اعظم خان نے سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کیخلاف ایل این جی ریفرنس کی سماعت کی۔ اس موقع پر شریک ملزمان مفتاح اسماعیل اور دیگر ملزمان کی جانب سے ایک روز حاضری سے استثنیٰ کی درخواستیں دی گئیں،شاہد خاقان عباسی اور بیرسٹر ظفر اللہ عدالت پیش ہوئے، بیرسٹر ظفراللہ کی ہفتے میں ایک دن مختص کرنے کی استدعاکرتے ہوئے کہا کہ جو دن مختص کیا جائیگا اس دن ہم یہاں موجود ہوں گے۔ عدالت نے کہاکہ سینئر وکلاء کبھی ہائیکورٹ میں ہوتے ہیں، کبھی سپریم کورٹ میں،ہم آپ کو کراس ایگزامن کیلئے تکلیف دیا کریں گے، آپ اپنا کوئی نمائندہ مقرر کر دیں جس کے سامنے بیانات قلمبند ہو سکیں، اس پر سابق وزیر اعظم نے کہا کہ کیمروں کو عدالت لانے کی اجازت دی جائے جس پر عدالت نے کیمرے عدالت لانے کی استدعا بھی مسترد کردی  دوران سماعت نیب کے پہلے گواہ کا بیان جاری رہا اور عدالت نے آئندہ سماعت پرمحمد حسن بھٹی کو بھی حاضری یقینی بنانے کی ہدایت کرتے ہوئے سماعت یکم دسمبر تک کیلئے ملتوی کردی۔

درخواست مسترد

مزید :

صفحہ آخر -