حضرت خواجہ غلام فریدؒ کا عرس کل سے شروع‘ محدود تقریبات کی اجازت 

        حضرت خواجہ غلام فریدؒ کا عرس کل سے شروع‘ محدود تقریبات کی اجازت 

  

 مٹھن کوٹ (نمائندہ خصوصی+نامہ نگار) سلطان العاشقین حضرت خواجہ غلام فرید  ؒ کے 123 ویں عرس مبارک کی سہ روزہ تقریبات کا آغاز 21 نومبر سے ضلع راجن پور کے تاریخی قصبہ کوٹ مٹھن میں شروع ہورہی ہیں کرونا ایس او پیز کی وجہ سے مزار فرید پر محددود پیمانے پر تقریبات ہوں گی اس سلسلہ میں ڈپٹی کمشنرراجن پور ذوالفقار علی  خان کھرل اور ڈی پی او فیصل گلزار کی زیرصدارت حضر ت خواجہ غلام فرید ؒ کے عرس کے انتظامات کا جائز ہ لینے کیلئے اجلاس فارسٹ(بقیہ نمبر23صفحہ 6پر)

 ریسٹ ہاؤس مٹھن کوٹ میں منعقد ہوا جس میں مزار فریدؒ کے ولی عہد خواجہ راول معین کوریجہ، اسسٹنٹ کمشنر راجن پور محمد آصف اقبال، جماعت اہلسنت کے ضلعی امیر علامہ خورشید رضااور دیگر مقامی و ضلعی افسران نے شرکت کی ڈپٹی کمشنر چوہدری ذولفقار علی خان کھرل نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت پنجاب کی ہدایت کے مطابق حضرت خواجہ غلام فرید ؒکے عرس کے موقع پر مزار فریدؒ پر کرونا ایس او پیز کی وجہ سے تقریبات کو محدود  اور میلہ کے پروگراموں  کو منسوخ کردیا گیا ہے۔ اور کسی قسم کی کوئی پابندی نہیں لگائی گئی۔ عرس مبارک کی تقریبات کی نشستیں گورنمنٹ کی ہدایت کے مطابق ہوں گی 5ربیع الثانی21 نومبر بروز ہفتہ کو پہلی نشست بعد نماز فجر مزار فریدؒ پر قران خوانی سے ہوگی جس میں خطیب دربار سید کلیم اللہ شاہ قران خوانی کریں گے جبکہ سجادہ نشین دربارفریدؒخواجہ معین الدین محبوب کوریجہ دربارفریدؒ کو غسل دیں گے جس میں ڈپٹی کمشنرراجن پور ذولفقار علی خان، ڈی پی او راجن پور فیصل گلزار، اسسٹنٹ کمشنر آصف اقبال سابق ضلعی ناظم سردار عبدالعزیزخان دریشک، ایم پی اے سردار اویس خان دریشک، ایم پی اے سردار احمد علی خان دریشک کے علاوہ کرونا کویڈ19 کی وجہ سے محددود افراد شرکت کریں گے غسل کی تقریب میں شا مل خاندان فریدؒ کی معزز شخصیات جن میں خواجہ شمس الدین کوریجہ،خواجہ کلیم الدین کوریجہ،ولی عہد دربارفریدؒخواجہ راول معین کوریجہ،خواجہ علی معین کوریجہ،خواجہ شریف محمدعامر کوریجہ خواجہ غلام فریدکوریجہ،خواجہ عزیرعامر کوریجہ،خواجہ عمیرعامر کوریجہ،خواجہ عماد کوریجہ،زونل منیجر سید شمس الحسن شاہ بھی شامل ہوں گے ولی عہد مزار فرید خواجہ راول معین کوریجہ نے بتایا کہ حکومت کی طرف سے کرونا کا بہانہ بنا کرعرس کے موقع پر مزار فرید پر تقریبات کو محددود کرنے اور میلہ پروگراموں کو منسوخ کرنے کے فیصلہ پر تحفظات کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ اس سلسلہ میں ہمیں اعتماد میں نہیں لیا گیا لیکن پھر بھی ہم نے حکومتی فیصلہ کو تسلیم کرتے ہوئے حکومتی حکام پر اعتماد کا اظہار کیاکیونکہ ہم ان اولیا ء کرام کی اولاد اور ان ہی کے پیروکاروں میں سے ہیں جنہوں نے ہمیشہ امن پسندی اور پیارومحبت کا درس دیا عرس کی تقریبات اور میلہ کو ایس او پیز کے ذریعے جاری رکھا جا سکتا تھا۔

اجازت

مزید :

ملتان صفحہ آخر -