راولپنڈی: بچوں سے بدفعلی‘ پرونو گرافی  مجرم کو 3 بار سزائے موت‘ کڑی سزائیں 

راولپنڈی: بچوں سے بدفعلی‘ پرونو گرافی  مجرم کو 3 بار سزائے موت‘ کڑی سزائیں 

  

ڈیرہ غازیخان (سٹی رپورٹر) آر پی او فیصل راناکے اخلاقی جرائم کے خلاف قانونی اقدمات نتیجہ خیزسامنے آگئے‘ راولپنڈی (بقیہ نمبر28صفحہ 6پر)

میں بطور سی پی او بچوں کو بدفعلی اور پرونو گرافی کا نشانہ بنانے والے انٹرنیشنل ڈارک ویب کے سرغنہ کو گرفتار کیا،فرنزک سائنس لیبارٹری کے ٹھوس ثبوتوں کے ساتھ چالان کیا، عدالت نے مجرم کو3بار سزائے موت،3بار عمر قید اور 66سال سزا سنادی، ریجنل پولیس آفیسر ڈی آئی جی محمد فیصل رانا کے پروفیشنل کمانڈر اور انٹرنیشنل لیول کی پولیسنگ کے ماہر ہونے پر اس وقت مہر تصدیق ثبت ہو گئی جب گزشتہ روزس ایڈیشنل سیشن جج راولپنڈی جہانگیر علی گوندل نے سہیل ایاز نامی مجرم کو بچوں سے بدفعلی کرنے،انہیں پرونو گرافی کا نشانہ بنانے اورنازیبا ویڈیوز انٹرنیشنل ڈارک ویب پر اپ لوڈ کرنے کے جرم میں 3بار سزائے موت،3بار عمر قید اور مجموعی طور پر66سال قید کی عبرتناک سزا سنائی،مجرم سہیل ایاز کو ڈی آئی جی محمد فیصل رانا نے سال گزشتہ راولپنڈی میں بطور سی پی او نہ صرف خود پکڑا بلکہ اس کے خلاف فرنزک سائنس لیبارٹری سمیت ٹھوس اور نقابل تردید شواہد اکٹھے کر کے چالان کیا،مجرم سہیل ایاز برطانیہ اور اٹلی سے بھی انہیں جرائم میں سزا یافتہ اور ڈی پورٹ ہوا تھا،مجرم عالمی اداروں میں بھاری پیکیج پر کنسلٹنٹ تھا،جب فیصل رانا نے بطور سی پی او سہیل ایاز کو گرفتار کیا تو اس وقت انٹرنیشنل و پاکستانی میڈیا نے  اس سٹوری کو کئی روز تک نمایاں انداز میں چلایا،سہیل ایاز کی گرفتاری کو ڈی آئی جی فیصل رانا کی پروفیشنل کمانڈنگ اور پولیسنگ کا نتیجہ قرار دیا،اس بڑے کام پر وزیر اعطم عمران خان اور وزیر اعلیٰ سردار عثمان بزدار نے بھی فیصل رانا اور راولپنڈی پولیس کو شاباش دی،اس وقت کے آئی جی نے فیصل رانا کی اس کارکردگی کو پولیس کی بڑی ”اچیومنٹ“ قرار دیا،دلچسپ بات یہ ہے کہ فیصل رانا نے اس وقت ملکی اور عالمی میڈیا کے سامنے سہیل ایاز کو معاشرتی ناسور اور سفاک درندی کہا،راولپنڈی کی عدالت نے بھی مجرم سہیل ایاز کو سزا سناتے ہوئے کینسر کو پھوڑا اور درندوں سے بدتر قرار دیا۔

سزائیں 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -