بے روز گاری: بصارت سے محروم افراد کا اجتماعی خود کشیوں کا فیصلہ 

بے روز گاری: بصارت سے محروم افراد کا اجتماعی خود کشیوں کا فیصلہ 

  

 بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر) بھوک،بے روز گاری اور مہنگائی سے تنگ آکر بصارت سے محروم افراد نے اپنی زندگیوں کا خود خاتمہ کرنے کا فیصلہ کر لیا۔احتجاجی بیان ریکارڈ کرانے پریس کلب پہنچ گئے۔کہتے ہیں کہ پنجاب اسمبلی کے باہر آگ لگا کر اجتماعی خود کشیاں کرینگے۔تفصیل کے مطابق بہاول پور ضلع کے مختلف علاقوں سے تعلق رکھنے والے بصارت سے محروم کامران احمد،حافظ محمد اکرم،محمد عرفان،محمد اکرم،حافظ رشید احمد،احمد حسین،رابعہ بی بی،زبید بی بی نے پریس کلب(بقیہ نمبر13صفحہ 6پر)

 میں احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے گھروں میں بھوک ناچ رہی ہے بے روز گاری مہنگائی سے تنگ آچکے ہیں ضلعی انتظامیہ کے پاس جاتے ہیں تو ہمیں لولی پاپ دیکر ٹرخا دیا جاتا ہے حالانکہ ہر پاکستانی کو روز گار فراہمکرنا حکومت کی ذمہ داری ہے حکومت ہمیں بتائے کہا ہم پاکستانی نہیں ہے کیا روز گار ہمارا حق نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر ہمیں روزگار فراہم نہ کیا گیا تو ہم لاہور پنجاب اسمبلی کے باہر خود کو آگ لگا کر اجتماعی خودکشیاں کریں گے اور ہماری موت کے ذمہ دار حکمران ہو نگے۔

ردعمل

مزید :

ملتان صفحہ آخر -