کہروڑ پکا:پیف سکول پرنسپل کا  تنخواہ مانگنے پر ٹیچر سے ناروا سلوک

کہروڑ پکا:پیف سکول پرنسپل کا  تنخواہ مانگنے پر ٹیچر سے ناروا سلوک

  

کہروڑپکا(نمائندہ خصوصی)پیف سکول کے پرنسپل نے تنخواہ مانگنے پر ٹیچر کوبچوں کے سامنے دھکے دے کر سکول سے باہر نکال دیا   ملتانی والا میں واقع نیو ہیون سکول کی خاتون ٹیچر طیبہ اشرف نے میڈیا سیگفتگو کرتے ہو ئے کہا کہ سکول کی پرنسپل ساجدہ پروین نے اس کو گزشتہ 4 ماہ کی تنخواہ نہیں دی تنخواہ مانگنے پر اس سے بدتمیزی کی اور اس کو دھکے دے کر سکول سے نکال دیا پھر (بقیہ نمبر16صفحہ6پر)

دوبارہ وہ اپنی والدہ کے ساتھ سکول میں تنخواہ کامطالبہ لے کر گئی تو سکول کیپرنسپل     نے سکول کے بچوں کے سامنے انتہا ئی نازیبا الفاظ استعمال کرتے ہو ئے ان سخت برا بھلا کہا اور سخت بے عزت کرکے سکول سے دھکے دے کر نکال دیا لاک ڈاون کے دوران بھی تنخواہیں نہیں دیں اس کے علاوہ سرکاری چھٹیاں ہونے پر بھی تنخواہیں کاٹ لی جاتی ہیں انہوں نے ڈپٹی کمشنر لودھراں سے مطالبہ کیا ہے کہ نیو ہیون سکول کے پرنسپل سے اس کی تنخواہیں لیکر دی جائیں اور اس سکول کی رجسٹریشن منسوخ کی جائے جہاں پر بچوں کی اچھی تربیت کی بجائے ان کے سامنے ان کو پڑھانے والی ٹیچر اور اس کی والدہ کوبچوں کے سامنے دھکے دے کرسکول سے نکالنا اور نہایت ہی بے ہودہ اور غلیظ الفاظ استعمال ان کے خلاف استعمال کرنا انتہائی زیادتی ہے اس کے خلاف سخت کاروائی کی جائے۔

ٹیچرز

مزید :

ملتان صفحہ آخر -