مذہبی روا داری، امریکہ کا دہرا کردار

مذہبی روا داری، امریکہ کا دہرا کردار

  

بھارت کے غیر قانونی قبضہ میں مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں پر ظلم و بربیت ختم ہونے کا نام نہیں لے رہی، بھارتی حکمرانوں نے عالمی قوانین کی صریحاً خلاف ورزی کرتے ہوئے مقبوضہ کشمیر میں دس لاکھ سے زیادہ فوج اور پیرا ملٹری دستے  تعینات کر رکھے ہیں،جو آئے روز نہتے کشمیریوں کو تشدد کا نشانہ بناتے ہیں۔چند ہی روز پہلے ظالموں نے پانچ کشمیریوں کو شہید کیا اور پھر ان کی میتیں لواحقین کے حوالے کرنے سے انکار بھی کر دیا۔اس پر کشمیر بھر میں آج ہڑتال کی جا رہی ہے،پاکستان کے دفتر خارجہ کی طرف سے اس قتل عام کے خلاف بھرپور احتجاج کیا گیا،اور دنیا کی توجہ دلائی گئی ہے،امریکی انتظامیہ نے مذہب کے نام پر تفریق اور زیادتی کے الزام میں جن ممالک کو اپنی فہرست میں شامل کر رکھا ہے،سعودی عرب اور پاکستان کو بھی شامل کر لیا گیا ہے،لیکن بھارت کا ذکر تک نہیں۔بھارتی انتہا پسند ہندوؤں نے نہ صرف مسلمانوں،بلکہ عیسائیوں اور دلتوں کا جینا بھی محال کر رکھا ہے۔پاکستان نے ہمیشہ دنیا کی توجہ اس طرف مبذول کرائی ہے،لیکن کوئی اثر نہیں لیا جاتا۔امریکی رویہ کسی طور بھی منصفانہ نہیں،اس کے خلاف بھی اسلامی ممالک کو متحد ہو کر آواز بلند کرنی چاہیے۔

مزید :

رائے -اداریہ -