سپروائزری افسران اپنی کارکردگی کو بہتر سے بہتر بنائیں، آئی جی

سپروائزری افسران اپنی کارکردگی کو بہتر سے بہتر بنائیں، آئی جی

  

 لا ہو ر (کر ائم رپو رٹر)انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب راؤ سردار علی خان نے فیلڈ افسران کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ صوبے کے تمام سپروائزری افسران اپنی کارکردگی کو بہتر سے بہتر بنائیں اور جرائم کنٹرول کے ساتھ ساتھ شہریوں کو خدمات کی باآسانی فراہمی پر بطور خاص توجہ دی جائے  انہوں نے مزیدکہاکہ پنجاب پولیس عوام کی خدمت کیلئے ہے افسران سائلین سے براہ راست رابطے میں آئیں اور تھانوں و پولیس دفاتر سے ٹاؤٹ مافیا اور سفارش کلچر کے خاتمے کو یقینی بنائیں۔ راؤ سردار علی خان نے ہدایت کی کہ تھانوں، پولیس خدمت مراکز اور دیگر دفاتر میں شہریوں کو بہترین سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے اور سائلین سے عزت و احترام سے پیش آئیں۔آئی جی پنجاب نے تاکید کی کہ کرپشن کسی بھی لیول پر برداشت نہیں کی جائے گی،سپروائزری افسران دفاتر میں بیٹھنے کی بجائے فیلڈ میں نکلیں  انہوں نے مزیدکہاکہ جرائم پیشہ افراد کی سرپرستی کرنے والے افسران واہلکاروں کی پنجاب پولیس میں کوئی جگہ نہیں، کسی افسر یا اہلکار کے خلاف ایسی شکایت ثابت ہوئی تو اسے محکمہ سے نکال باہر کیا جائے گا  اگر کسی ضلع میں ٹارچر سیل، ملزمان کو غیر قانونی حراست میں رکھنے کا واقعہ اور قیدیوں کے بنیادی انسانی حقوق پامال کیے گئے تو سپروائزری افسران کو جواب دینا ہوگا۔ راؤ سردار علی خان نے کہا کہ مقدمے کے اندراج میں تاخیر برداشت نہیں ہو گی،افسران اپنے اپنے ریجن کی کارکردگی کے ذمہ دار ہونگے انہوں نے ہدایت کی کہ افسران جزا اور سزا کے عمل پر فوکس رکھتے ہوئے فورس اور ماتحت سٹاف کی کارکردگی کو بہتر سے بہتر بنائیں یہ ہدایات سنٹرل پولیس آفس میں منعقدہ آر پی اوز ویڈیو لنک کانفرنس کے دوران صوبے کے تمام ریجنل افسران کو جاری کیں دوران کانفرنس افسران کی کارکردگی کو جانچنے کے لیے ماہانہ اہداف مقرر کیے گئے کانفرنس میں ایڈیشنل آئی جی انویسٹی گیشن پنجاب، ڈی آئی جی انویسٹی گیشن پنجاب، ڈی آئی جی آپریشنز پنجاب، ڈی آئی جی آئی ٹی، ڈی آئی جی آر اینڈ ڈی اور اے آئی جی مانیٹرنگ سمیت دیگر افسران بھی موجود تھے۔

مزید :

علاقائی -