قومی اسمبلی: جولائی 18ء سے جون 21ء تک سرکاری قرضے 14.9ٹریلین روپے بڑھے: وزرات خزانہ 

قومی اسمبلی: جولائی 18ء سے جون 21ء تک سرکاری قرضے 14.9ٹریلین روپے بڑھے: وزرات ...

  

اسلام آباد(آئی این پی) قومی اسمبلی کا اجلاس غیر معینہ مدت کیلئے ملتوی کر دیا گیا جبکہ وزارت خزانہ اور وزارت اقتصادی امور نے تحریری جوابات میں ایوان کو بتایا ہے کہ کابینہ ڈویژن نے جون 2019میں قرض پر تحقیقاتی کمیشن قائم کیا، تحقیقاتی کمیشن نے آج تک کابینہ ڈویژن کو کوئی رپورٹ جمع نہیں کروائی ہے، جولائی 2018سے جون 20121کے دوران کل سرکاری قرض میں 14.9 ٹریلین روپے کا اضافہ ہوا، بیرونی ممالک اور تنظیموں نے کووڈ 19کے ریسپانس کے ضمن میں پاکستان کو کل 4250.8ملین ڈالر کی رقم دینے کا وعدہ کیا ہے، اس میں 10نومبر 2021تک 3632.7ملین ڈالر کی رقم کی ادائیگی کی جا چکی ہے۔جمعہ کو قومی اسمبلی کا اجلاس ڈپٹی اسپیکر قاسم خان سوری کی صدارت میں ہوا، اجلاس کے دوران عامر ڈوگر کو تحریک پیش کرنے کی ہدایت کی،عامر ڈوگر نے  قومی اسمبلی کے چیمبر کو او آئی سی کی وزراء  خارجہ کی کونسل کے اجلاس کے لئے زیر استعمال لانے سے متعلق  تحریک پیش کر ہی رہے تھے کہ اپوزیشن ارکان نے تحریک کے بارے میں استفسار کرنا شروع کر دیااور جواب نہ ملنے پر کورم کورم کی آوازیں لگانا شروع کر دیں، ڈپٹی اسپیکر نے اپوزیشن کی آوازوں کو نظر انداز کرتے ہوئے تحریک پر رائے شماری کرائی جس کے بعد انہوں نے تحریک کو منظور قرار دیتے ہوئے اجلاس کی کاروائی غیر معینہ مدت کے لئے ملتوی کر دی۔

قومی اسمبلی 

مزید :

صفحہ آخر -