سوئی گیس صارفین کی جیبیں خالی کرنیکا نیا پلان تیار 

  سوئی گیس صارفین کی جیبیں خالی کرنیکا نیا پلان تیار 

  

خیرپور سادات(نمائندہ پاکستان)گھریلو صارفین  کو سوئی ناردرن کمپنی نے اپنے ستم کا نشانہ بنانے کا نیا طریقہ ڈھونڈ لیا نئے کنکشن فراہمی پر پابندی عائد ہونے اور(بقیہ نمبر14صفحہ نمبر6)

 صارفین گیس کو چوبیس گھنٹے میں صرف چھ گھنٹے گیس فراہمی سے سوئی ناردرن گیس کمپنی کو مالی بحران کا سامنا ہے مالی بحران سے دوچار کمپنی نے اس سے نکلنے کے لیے نیا طریقہ کار ڈھونڈ کر اس پر عمل درآمد شروع کر دیا ہے جس سے ہر صارف کو چار سے پانچ ہزار روپے گیس بلوں میں ادا کرنا ہونگے اس حوالے سے ملک زوار علی گھلو نے بتایا ہے کہ گزشتہ روز صبح چھ بجے نماز فجر کے وقت سوئی گیس کا عملہ ہمارے محلہ چاہ پکے والا پہنچ گیا اور آتے ہی میرے میٹر گیس سمیت دیگر کے صحیح سلامت گیس میٹر بغیر نوٹس اطلاع کے اتار کر ان کی جگہ پر نئے گیس میٹر نصب کردیئے ہمیں دن کا اجالا پھیلنے پر پتہ چلا جس کی بابت محکمہ سوئی گیس سے رابطہ کیا تو پتہ چلا ہے کہ سوئی گیس حکام نے صارفین کی جیبوں پر ڈاکہ ڈالنے کا پلان ترتیب دیا ہے جس کے تحت پرانے میٹر گیس تبدیل کر کے ان کی جگہ پر نئے میٹر گیس نصب کرکے ہرصارف سے گیس بلوں میں چار سے پانچ ہزار روپے وصول کئے جائیں گے جوکہ سراسر غلط ہے ہم اس پر احتجاج کرتے ہیں اور جی ایم سوئی گیس ملتان سمیت دیگر حکام سے مطالبہ کرتے ہیں کہ یہ ظالمانہ پالیسی فوری طور پر واپس لی جائے کیونکہ اس سے مہنگی اور ناپید گیس کے صارفین جو پہلے ہی اذیت میں مبتلا ہیں ان پر مزید بوجھ ڈالنا ظلم ہے

مزید :

ملتان صفحہ آخر -