سیاسی جماعتوں کا مل بیٹھنا وقت کی ضرورت معاون خصوصی وزیراعظم کی ملتان میں پریس کانفرنس،چار نکاتی ایجنڈا پیش 

سیاسی جماعتوں کا مل بیٹھنا وقت کی ضرورت معاون خصوصی وزیراعظم کی ملتان میں ...

  

ملتان (سٹی رپورٹر) وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے مذہبی ہم آہنگی اور چیئرمین علما کونسل مولانا طاہر محمود اشرفی نے چارٹر آف پاکستان پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ ملک میں معاشی و سیاسی استحکام کے لیے تمام سیاسی و مذہبی جماعتیں مل بیٹھیں۔.ہفتہ کے روزملتان میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا طاہر اشرفی نے کہا کہ اگر ملک کی مذہبی قوتیں "پیغام پاکستان"  کے تحت ایک پیج پر آسکتی ہیں تو سیاسی جماعتیں معاشی بحالی کے لیے کیوں نہیں مل سکتیں جو کہ وقت کی اہم ضرورت ہے۔ انہوں نے کہاکہ  وزیر اعظم محمد شہباز شریف نے چار سال قبل اپوزیشن لیڈر کی حیثیت سے پارلیمنٹ میں یہی روڈ میپ پیش کیا تھا۔اشرفی نے کہا کہ آرمی چیف کی تقرری وزیراعظم کا آئینی حق ہے اور سوشل میڈیا پر قومی سلامتی کے مسائل پر بحث نہیں ہونی چاہیے۔انہوں نے کہا کہ ملک انتہائی مشکل وقت سے گزر رہا ہے اور انتہا پسندی کے خاتمے اور بین المذاہب ہم آہنگی کے فروغ کی اشد ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ ریاست دشمن عناصر پاکستانی قوم اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے درمیان دراڑ پیدا کرنا چاہتے ہیں لیکن  ان کے مذموم عزائم ناکام  ہوں گے۔ملک میں پولرائزیشن پاکستان کے حق میں نہیں۔پاکستان علماکونسل ملک بھر میں تمام سیاسی اور مذہبی اداروں کے درمیان بامعنی مذاکرات کا مطالبہ کرتی ہے۔ مولانا طاہراشرفی نے کہا کہ یہ وقت لانگ مارچ کا نہیں بلکہ قدرتی آفات سے تباہ ہونے والے ملک کے 30 ملین سیلاب سے متاثرہ لوگوں کی مدد کا ہے۔ انہوں نے سیلاب سے متاثرہ علاقوں کے لوگوں کے مسائل بتاتے ہوئے کہا کہ سیلاب سے لوگ بے گھرہوگئے ہیں اور مختلف بیماریوں کاشکارہورہے ہیں۔طاہراشرفی نے کہا کہ پوری قوم سود کے خلاف اپیلیں واپس لینے کا اقدام قابل تعریف ہے اور   بینکوں سے اظہار  تشکر کرتی ہے۔انہوں نے کہاکہ ملک میں سود سے پاک ماحول پیدا کرنے پر پوری توجہ ہونی چاہیے۔انہوں نے ملک کی خوشحالی کے لیے چار نکاتی ایجنڈا تجویز کیا جس میں سودکا خاتمہ، نظام عدل، انتخابی اصلاحات اور 25 سالہ سیاسی استحکام کا منصوبہ شامل ہے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ سعودی عرب کے ولی عہد محمد بن سلیمان جلد پاکستان آئیں گے۔ انہوں نے واضح کیا کہ دونوں ممالک کے درمیان ایمان اورعقیدے کے تعلقات ہیں۔انہوں نے کہاکہ سعودی عرب کے تعاون سے آئل ریفائنری سمیت تمام منصوبے جاری رہیں گے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان علماکونسل نے سابق وزیراعظم عمران خان پر حملے،  صحافی ارشد شریف کے قتل اورسینیٹر  اعظم سواتی کے معاملے کی شدید مذمت کی ہے۔بعد ازاں مولانا طاہراشرفی نے مولانا اسرار الحق کے بیٹے اظہار الحق کی دستاربندی کرائی

مزید :

صفحہ اول -