مقبوضہ کشمیر، فہمیدہ صوفی کورہائی کے فوراً بعد دوبارہ گرفتارکرلیاگیا

مقبوضہ کشمیر، فہمیدہ صوفی کورہائی کے فوراً بعد دوبارہ گرفتارکرلیاگیا

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی پولیس نے دختران ملت کی غیر قانونی طورپر نظربند رہنماء فہمیدہ صوفی کو عدالتی احکامات پر رہائی کے فوراً بعد دوبارہ گرفتار کر کے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا ہے ۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق فہمیدہ صوفی کو ایگزیکٹیو مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش کیاگیا ۔اس موقعے پرانکے وکلاء نے عدالت کے سامنے ضمانتی درخواست پیش کی جسے منظور کرتے ہوئے ایگزیکٹیو مجسٹریٹ نے فہمیدہ صوفی کی رہائی کے احکامات صادر کئے۔ فہمیدہ صوفی کے وکلاء نے صحافیوں کو بتایاکہ اگرچہ عدالت نے ان کے موکل کی رہائی کے احکامات جاری کئے تھے تاہم پولیس نے انہیں دوبارہ گرفتار کرکے نامعلوم مقام پرمنتقل کردیا ہے ۔وکلاء نے بتایاکہ فہمیدہ کے اہلخانہ کوانکے حوالے سے شدید تشویش لاحق ہے کیونکہ پولیس نے انہیں نامعلوم مقام پر منتقل کردیا ہے اور اس بارے میں کوئی معلومات فراہم نہیں کی جارہی ہے ۔ادھردختران ملت کی جنرل سیکریٹری ناہیدہ نسرین نے ایک بیان میں فہمیدہ صوفی کی دوبارہ گرفتاری کی شدید مذمت کی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ اس طرح کے ہتھکنڈوں کے ذریعے حریت رہنماؤں کے جذبہ حریت کو کمزور نہیں کیا جاسکتا ۔

انہوں نے پلوامہ میں کشمیریوں کے خلاف طاقت کے بے دریغ استعمال پر شدیدردعمل کا اظہار کیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ جیسے ہی لوگ آزادی کے حق میں ریلی میں شرکت کیلئے جمع ہونا شروع ہوئے تو بھارتی فورسز نے آنسو گیس اور ہوائی فائرنگ کا بے دریغ استعمال کیا ۔ انہوں نے بارہمولہ میں پولیس کے چھاپوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ان چھاپوں کا مقصد لوگوں کو ہراساں کرناہے۔

مزید : عالمی منظر