پی اے سی نے ضدی افسران کو سدھارنے کیلئے پانچ رکنی کمیٹی تشکیل دیدی

پی اے سی نے ضدی افسران کو سدھارنے کیلئے پانچ رکنی کمیٹی تشکیل دیدی

اسلام آباد( آن لائن ) قومی اسمبلی کی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نے وفاقی حکومت طاقتور اور ضدی افسران کو سدھارنے کے لئے پانچ رکنی کمیٹی تشکیل دیدی ہے کمیٹی کی سربراہی سید خورشید شاہ کرینگے اراکین میں محمود خان اچکزئی ،میاں عبدالمنان ، نوید قمر اور عاشق گوپانگ ہوں گے پی اے سی نے یہ فیصلہ بدھ کے روز ہونے والے اجلاس میں اس وقت کیا جس نیشنل انشورنس کمپنی کے سربراہ سٹیٹ لائف کے سربراہ اور سیکرٹری کامرس اجلاس میں شریک نہ ہوئے اور ماتحت افسران کو اجلاس میں بھیج دیا پی اے سی کا اجلاس پارلیمنٹ ہاؤس میں سید خورشید شاہ کی صدارت میں ہوا اجلاس میں ان دونوں قومی اداروں کی کارکردگی بارے تفصیلی جائزہ لینا تھا اجلاس شروع ہوا تو ماتحت افسران نے بتایا کہ اعلیٰ حکام مختلف کاموں میں مصروف ہیں جس پر اراکین پی اے سی نے شدید برہمی کااظہار کیا اور کہا کہ انتہا ہوگئی ہے افسران پارلیمنٹ کو اہمیت ہی نہیں دیتے ان افسران نے ہمارے توہین کی ہے ا جلاس تیس منٹ کے لئے برخاست کیا گیا لیکن پھر بھی کوئی افسر اجلاس میں شریک نہ ہوا اجلاس برخاست کرنے کے بعد چیئرمین پی اے سی نے پانچ رکنی کمیٹی تشکیل دے دی جو سپیکر قومی اسمبلی سے ملاقات کرے گی اور اجلاسوں میں شریک نہ ہونے والے افسران کیخلاف سخت کارروائی بارے لائحہ عمل تشکیل دیا جائے گا صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے سیدخورشید شاہ نے کہا کہ افسران کااجلاس میں نہ آنا ناقص حکومت کی نشانی ہے یہ حکومت جب پارلیمنٹ کو عزت نہ دے گی تو افسران کی گردن میں بھی سریا آجائے گا ممبران نے اجلاس میں کوئی ایجنڈا مکمل نہ ہونے پر فیصلہ کیا کہ وہ آج کے ٹی اے ڈی اے وصول نہیں کرینگے جس بارے سیکرٹریٹ پی اے سی کو آگاہ کردیا گیا ہے ۔

مزید : صفحہ آخر