ڈسٹرکٹ بارمیں عمران خان اورعلی احمد کرد کے اعزاز میں تقریبات کی جھلکیاں

ڈسٹرکٹ بارمیں عمران خان اورعلی احمد کرد کے اعزاز میں تقریبات کی جھلکیاں

(ضیاء الحق خان سے)*ڈسٹرکٹ بار ملتان میں 2 اہم تقریب ہونے کے باعث گہما گہمی کا سماں رہا اور12 بجے عدالتی کام بند کردیا گیا تاہم اس سے قبل بھی وکلاء کی درخواست پر زیادہ تر مقدمات کی سماعت ملتوی کردی گئی ۔

*ڈٹرکٹ بار میں(بقیہ نمبر5صفحہ12پر )

(بقیہ نمبر1صفحہ12پر ) پہلی تقریب وکلاء تحریک کے مرکزی رہنما اور سابق صدر سپریم کورٹ بار علی احمد کرد اور دوسری تقریب چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کے اعزاز میں رکھی گئی تھی۔

* علی احمد کرد کے اعزاز میں تقریب بارروم میں رکھی گئی جبکہ عمران خان کی تقریب کیلئے پنڈال ڈی سی او آفس کے سامنے سجایا گیا۔

* دونوں تقاریب میں وکلاء کی کثیر تعداد موجود رہی

* تقاریب کی سیکورٹی کے پیش نظر گاڑیوں اور موٹرسائیکلوں کی پارکنگ کا انتظام سول لائنز کالج میں کیا گیا اورضلع کچہری کے اندراور فلائی اوور کے نیچیپارکنگ علیٰ الصبح رکاوٹیں کھڑی کر کے بند کردی گئی

* سیکورٹی کے پیش نظر سیشن گیٹ اوراینٹی کرپشن گیٹ کے علاوہ باقی تمام داخلی و خارجی دروازے بند رکھے گئے۔

* علی احمد کرد نے سابق صدر پرویز مشرف کو تنقید کا نشانہ بنایا اور اسے وکلاء تحریک کے عمل میں عبرت کا نشان قرار دیا۔جس پر وکلاء نے نعرے بازی کی۔

* علی احمد کرد کی تقریب وقت پر جبکہ عمران خان کی تقریب ایک گھنٹہ تاخیر سے شروع ہوئی۔

*ڈسٹرکٹ بار میں عمران خان کی آمد کیلئے سخت سکیورٹی کے انتظامات کئے گئے اور پنڈال کے داخلی راستے پر واک تھرو گیٹس نصب کیا گیا جبکہ قریبی اونچی عمارتوں و فلائی اوور بھی اہلکار تعینات کرنے کے ساتھ موبائل وبم جیمر بھی لگائے گئے ۔

* بارروم اورپنڈال میں جنوبی پنجاب سے ناانصافیوں اورعلیحدہ صوبہ کے مطالبات سمیت ،تحریک انصاف اورانصاف لائرز فورم عہدیداران کے بینرز اور پوسٹرز آویزاں کئے گئے۔

* عمران خان کی آمد پر سٹیج کے ارد گرد وکلاء کیساتھ ساتھ پرائیویٹ افراد کا بھی رش رہا۔ جنہوں نے سٹیج پر چڑھنے کی کوشش کی جن کو روکنے کیلئے لائیرز فورم کی بنائی گئی سکیورٹی ٹیم بھی انہیں روک نہ سکی

* وکلاء عمران خان کی آمد سے سٹیج پر بیٹھنے تک ان کے حق میں نعرے لگاتے رہے۔

* وکلاء کی کثیر تعداد نے عمران خان کے احتساب مارچ کے حق میں نعرے لگائے اور اس میں بھرپور شرکت کے عزم کا اظہار کیا۔

* عمران خان نے چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ سے ملتان کے وکلاء کے حقوق پورا کر نے کا بھی مطالبہ کیا۔

* کئی وکلاء اپنے بچوں کو بھی ہمراہ لائے۔ تقریب کے دوران اور بعد میں وکلاء اپنے بچوں کے ہمراہ عمران خان کیساتھ تصاویر بناتے رہے۔

* خواتین وکلاء کی کثیر تعداد نے تقاریب کے اختتام پر علی احمد کرد اور عمران خان کیساتھ تصاویر بنوائیں۔

* تقاریب میں تلاوت عبدالرحمان جوئیہ ،جاوید احمداورنعت وسیم ممتاز ،قارب نوید ہاشمی نے پیش کرنے کی سعادت حاصل کی جبکہ نظامت کے فرائض جنرل سیکرٹری محمد عمران خان خاکوانی نے انجام دئیے۔

*اس موقع پر ممبران قومی اسمبلی شاہ محمود قریشی،جہانگیرترین ،ملک عامر ڈوگر،ممبران صوبائی اسمبلی ظہیرالدین علیزئی ،راناجاویداختر،سابق ممبران اسمبلی

اسحاق خان خاکوانی ،احمد حسن دیہڑ اورڈاکٹر اختر ملک بھی ہمراہ تھے۔

*ڈسٹرکٹ بارایسوسی ایشن کی جانب سے علی احمد کرد کو اعزازی لائف ممبر شپ دی گئی جس پر وکلاء نے کھڑے ہوکر ان کوتالیاں بجاکر خراج تحسین پیش کیا جبکہ سینئر وکلا ء مرزاعزیز اکبر بیگ،محمود اشرف خان ،خالد اشرف خان نے بارکی جانب سے انھیں لائف ٹائم ممبر شپ سٹریفیکیٹ اور گلدستہ پیش کیا۔

*دونوں تقاریب کے دوران پنڈال کھچا کھچ بھرے رہے اور وکلاء کی بڑی تعداد نشستیں کم ہونے کی وجہ سے کھڑی رہی جبکہ عمران خان کے اعزاز میں تقریب بدنظمی کا شکار رہی۔

* تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے اپنی تقریر کے دوران نعرے لگانے سے روک دیا لیکن ان کی ہدایت پر بھی عمل نہیں کیا گیا۔

بار تقریب جھلکیاں

مزید : ملتان صفحہ آخر