پی ایس پی نے گورنر سندھ کو گرفتار کرنے کا مطالبہ کردیا

پی ایس پی نے گورنر سندھ کو گرفتار کرنے کا مطالبہ کردیا

کراچی (اسٹاف رپورٹر)پاک سرزمین پارٹی نے گورنر سندھ پر جوابی وار کرتے ہوئے جرائم پیشہ عناصر کی سرپرستی کرنے کا الزام عائد کردیا پی ایس پی کے رہنما انیس ایڈوکیٹ نے عشرت العباد کو فی الفور گرفتار کرنے اور ان کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں ڈالنے کا مطالبہ کردیاہے۔پی ایس اپی رہنما انیس ایڈوکیٹ نے گورنر سندھ کی جانب سے مصطفی کمال پر کی جانے والی تنقید پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ گورنر سندھ سیاسی ہوچکے اور انہوں نے گورنر ہاؤس کو سیاسی اکھاڑا بنادیا ہے سربراہ پی ایس پی پر الزام لگانے والے عشرت العباد خود جرائم پیشہ عناصر کی سرپرستی کر رہے ہیں۔انیس ایڈوکیٹ نے کہا کہ سانحہ بارہ مئی کی تحقیقات ہوگی تو گورنر سندھ بھی اس میں ملوث ہوں گے وہ گورنر ہاؤس کی چار دیواری سے باہر نکلے تو انہیں پتہ چل جائے گا کہ دنیا کیا ہے ، بحیثیت مئیر کراچی مصطفی کمال نے کراچی شہر کی ترقی کے لئے جو ترقیاتی کام کئے اسے پاکستان نہیں بلکہ پوری دنیا نے سراہا ، سابق مئیر نے اپنے دور میں شہر کی شکل تبدیل کرڈالی اس کا اعتراف خود ان کے بدترین مخالفین نے بھی کیا ۔ اس موقع پر انہوں نے مطالبہ کیا کہ گورنر سندھ اپنے عہدے سے استعفیٰ دیکر حقائق کا سامنا کریں۔

مزید : کراچی صفحہ اول