پیٹرولیم مصنوعات پر "اوگرا "نے اضافی ٹیکس عائد کیا ،حکومت کا ہائی کورٹ میں جواب

پیٹرولیم مصنوعات پر "اوگرا "نے اضافی ٹیکس عائد کیا ،حکومت کا ہائی کورٹ میں ...
پیٹرولیم مصنوعات پر

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے پیٹرولیم مصنوعات پر 50فیصد سیلز ٹیکس کے نفاذ اور ناقص پیٹرول کی درآمد کے خلاف دائر درخواست کی سماعت 9 دسمبر تک ملتوی کر دی ۔عدالتی حکم پر سیکرٹری وزارت پیٹرولیم نے جواب داخل کراتے ہوئے کہا ہے کہ پیٹرولیم مصنوعات پر اوگرا کی جانب سے اضافی ٹیکس عائد کیا گیاہے ۔

جسٹس مامون رشید شیخ نے کیس کی سماعت کی۔ڈپٹی اٹارنی جنرل نصر احمد نے سیکرٹری پیٹرولیم کی جانب سے عدالت میں جواب داخل کراتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ حکومت پیٹرولیم منوعات پر اضافی سیلز ٹیکس عائد کرنے کا اختیار رکھتی ہے تاہم پیٹرولیم مصنوعات پر اضافی سیلز ٹیکس اوگرا کی جانب سے عائد کیا گیا ہے۔عدالت کو بتایا کہ وزیر اعظم قوم سے مسلسل جھوٹ بول کر غیر آئینی اور غیر قانونی طور پر پیٹرولیم مصنوعات پر 50فیصد سلز ٹیکس وصول کر نے کا انتظامی حکم جاری کر رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت ملک میں ناقص پیٹرول برآمد کر کے اپنے ہی شہریوں کی جیبوں پر ڈاکہ ڈال رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کو وفاقی کابینہ اور پارلیمنٹ کی منظوری کے بغیر 50فیصد ٹیکس عائد کرنے کا کوئی اختیار حاصل نہیں جس پر عدالت نے کیس کی مزید سماعت 9 دسمبر تک ملتوی کرتے ہوئے فریقین کے وکلاءکو بحث کے لئے طلب کر لیاہے۔

مزید : لاہور