شریف خاندان اور پارٹنرز کا جیلوں میں جانے کا وقت بھی آئے گا، عبدالعلیم

شریف خاندان اور پارٹنرز کا جیلوں میں جانے کا وقت بھی آئے گا، عبدالعلیم

  

لاہور(نمائندہ خصوصی ) تحریک انصاف سنٹرل پنجاب کے صدر عبدالعلیم خان نے کہا ہے کہ" فرد جرم عائد ہونے کے بعد شریف خاندان اور ان کے پارٹنرز کا جیلوں میں جانے کا وقت بھی آئے گا عبدالعلیم خان نے مختلف اضلاع کے پارٹی رہنماؤں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آخر کار ممنون صدر بھی نواز لیگ کی اصل"کارکردگی"بیان کیے بغیر نہیں رہ سکے اور بھانڈہ پھوٹ گیا ہے کہ4برسوں میں نا کوئی ڈیم اور نہ کوئی ہسپتال اور 14ہزار8سو ارب کا قرضہ کہاں گیا ؟انہوں نے کہا کہ اپنی ہی غلطیوں کے بوجھ تلے دب کر نواز لیگ جلد ماضی کا قصہ بننے والی ہے میاں صاحب خود نہیں بچ سکے تو وہ پارٹی کیسے بچائیں گے اسی لیے ان کے بھائی کے بعد اب وزراء بھی واویلا کرنا شروع ہو گئے ہیں لیکن اپنا ذاتی اقتدار بچانے کیلئے نواز شریف کسی بھی شے کو داؤ پر لگا سکتے ہیں اسی لیے وہ پاکستان کی سلامتی کو بھی اپنے اقتدار سے زیادہ عزیز نہیں سمجھتے عبدالعلیم خان نے کہا کہ گزشتہ ساڑھے4برسوں میں کرپشن ،بدانتظامی ، بے روزگاری ،بے یقینی اور افراتفری میں اضافے کے علاوہ کچھ نہیں ہواقوم کو جھوٹے اعداد و شمار میں مبتلا کر کے حکمرانوں نے ذاتی فائدے اٹھانے کے علاوہ کسی معاملے پر توجہ نہیں دی عبدالعلیم خان نے کہا کہ آج وزیر اعلیٰ پنجاب نیب کو کرپشن کا ذمہ دار قرار دے رہے ہیں کل یہی باتیں عمران خان کرتے تھے تو انہیں سمجھ نہیںآتی تھی انہوں نے کہا کہ آج بھی وفاقی وزراء اور گورنر صاحبان اپنا محکمانہ اور انتظامی کام کرنے کی بجائے سیاست بچاؤ مہم پر نکلے ہوئے ہیں جس کا ایک مظاہرہ گورنر سندھ نے مریم نواز کے گھر پر حاضری دے کر کیا ہے شاید وہ اپنے آپ کو حقیقت میں گورنر سمجھ بیٹھے تھے لیکن شریف خاندان نے انہیں ان کی حیثیت کا احساس دلادیا ہے عبدالعلیم خان نے کہا کہ آج بھی اپنی غلطیاں تسلیم کرنے کی بجائے عدالتوں پر ملبہ ڈالنے کی سازشیں کی جار ہی ہیں ابھی والیم ٹین کے راز عوام تک نہیں پہنچے اور حسن اور حسین نواز نے بھی ملک واپس آنا ہے لیکن چور شور مچانے میں مصروف ہیں عبدالعلیم خان نے کہا کہ آخر کار دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو کر رہے گا اور قومی دولت لوٹنے والے ایک ایک شخص کو کٹہرے میں آنا ہو گا ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -