سرسید نے تعلیم کے ذریعے مسلمانوں کے حالات بہتر کرنے کی کوشش کی، ڈاکٹر نظام الدین

سرسید نے تعلیم کے ذریعے مسلمانوں کے حالات بہتر کرنے کی کوشش کی، ڈاکٹر نظام ...

لاہو(ایجوکیشن رپورٹر)چیئرمین پنجاب ہائر ایجوکیشن پروفیسر ڈاکٹر نظام الدین نے کہا ہے کہ سر سید احمد خان نے تعلیم کے ذریعے برصغیر کے مسلمانوں کے حالات میں بہتری لانے کے لئے لازوال کوششیں کیں۔ وہ پنجاب یونیورسٹی پاکستان سٹڈی سنٹر کے زیر اہتمام سر سید تعلیم و تہذیب و اخلاق فاؤنڈیشن کے اشتراک سے الرازی ہال میں سر سید احمد خان200ویں سالگرہ کی تقریبات کے سلسلے میں منعقدہ سیمینار سے خطاب کررہے تھے۔تقریب میں وائس چانسلر ڈاکٹر ظفر معین ناصر، سر سید تعلیم و تہذیب و اخلاق فاؤنڈیشن کے کنوینر سید محمود اسداللہ ،پنجاب یونیورسٹی ڈین فیکلٹی آف آرٹس اینڈ ہیومینٹیز پروفیسر ڈاکٹر محمد اقبال چاولہ ، قائمقام ڈائریکٹر پاکستان سٹڈی سنٹر ڈاکٹر امجد مگسی، پروفیسر ڈاکٹر اقدس علی کاظمی، فیکلٹی ممبران اور طلباؤطالبات کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ اپنے خطاب میں پروفیسر ڈاکٹر نظام الدین نے طلبہ کو نصیحت کی کہ وہ سرسید کی تعلیم، مذہب اور سائنس کے شعبوں میں خدمات کا ضرور مطالعہ کریں ۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر ظفر معین ناصر نے کہا کہ برصغیر پاک و ہند کی تاریخ میں سرسید احمد خان ایک عظیم مصلح اور مفکر تھے۔

انہوں نے کہا کہ ان کی حکمت عملی نے جارح برطانوی سامراج کو مسلمانوں کے ساتھ تعلقات کو بہتر بنانے پر مجبور کر دیا۔ انہوں نے کہا کہ سر سید نے مسلمانوں میں جدید تعلیم کے رحجان کو فروغ دیا۔ انہوں نے کہا کہ سرسید کے پیغامات کو لے کہ ہم اپنی توانائیوں کو استعمال کرتے ہوئے آج بھی عظیم قوم بن سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سرسید کا پیغام تھا تعلیم، تعلیم اور تعلیم۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پروفیسر ڈاکٹر اقبال چاولہ نے سر سید احمد خان کی مذہبی خدمات پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے کہا کہ وقت کے ساتھ ساتھ سر سید احمد خان کے افکار میں بہترین تبدیلیاں رونما ہوئی جس سے مسلمانوں کو رہنمائی ملی۔ انہوں نے کہا کہ سر سید احمد خان نے حکمرانوں اور رعایا میں فاصلوں کو کم کرنے کے لئے اپنا کردار ادا کیا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر امجد مگسی نے کہا کہ سرسید احمد خان ایک عظیم سکالر، سماجی مصلح، ماہر تعلیم، سیاستدان، مصنف اور صحافی تھے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت میں جدیدیت لانے میں سر سید احمد خان نے اپنا کردار ادا کیا۔ پروفیسر ڈاکٹر اقدس علی کاظمی نے اپنے خطاب میں سود سے متعلق سر سید احمد خان کے افکار پر تفصیلی روشنی ڈالی۔ سر سید احمد خان کے پڑپوتے سید احمد خان نے کہا کہ سر سید احمد خان نے مسلمان مردوں اور خواتین دونوں کی تعلیم پر زور دیا۔ انہوں نے درست مذہبی افکار اجاگر کئے اور حالات حاضرہ کے چیلنجز سے بخوبی مقابلہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ سر سید نے نوجوانوں کی کردار سازی پر بھی زور دیا ہے اور علی گڑھ میں بین المذاہب ہم آہنگی کو بھی فروغ دیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4