سلامتی کونسل کی جانب سے افغانستان میں دہشت گرد حملوں کی مذمت

سلامتی کونسل کی جانب سے افغانستان میں دہشت گرد حملوں کی مذمت

  

واشنگٹن (اے پی پی) اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے منگل کوافغان صوبہ پکتیا، غزنی اور کابل میں ہونے والے بزدلانہ دہشت گرد حملوں کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے جن میں 70 سے زائد افراد ہلاک جبکہ 200 سے زائد زخمی ہوگئے تھے،ان حملوں کی ذمہ داری طالبان نے قبول کی۔سلامتی کونسل نے ہلاک ہونے والوں کے اہل خانہ اور حکومتِ افغانستان سے تعزیت اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کی خواہش کا اظہار کیا۔

بیان میں مزیدکہا گیا ہے کہ سلامتی کونسل کے ارکان نے اس بات کا اعادہ کیا کہ ہر قسم کی دہشت گردی بین الاقوامی امن اور سلامتی کے لیے انتہائی سنگین خطرات کا باعث ہے۔کونسل کے ارکان نے اس ضرورت پر زور دیا کہ دہشت گردی کی قابل مذمت حرکات میں ملوث حملہ آوروں، منصوبہ سازوں، مالی وسائل فراہم کرنے والوں اور سرپرستوں کو انصاف کے کٹہرے میں لاکھڑا کیا جائے اور بین الاقوامی قانون اور سلامتی کونسل کی متعلقہ قراردادوں کے عین مطابق اس سلسلے میں حکومتِ افغانستان اور دیگر تمام متعلقہ حکام کے ساتھ بڑھ چڑھ کر تعاون کیا جائے۔سلامتی کونسل کے ارکان نے اس بات کا اعادہ کیا کہ دہشت گردی کا کوئی بھی حربہ مجرمانہ حرکت ہے جس کی کوئی گنجائش نہیں چاہے اس کا محرک کچھ بھی ہو، یہ کہیں بھی ہو، کبھی بھی سرزد ہو اور چاہے اِس میں کوئی بھی ملوث ہو۔

مزید :

عالمی منظر -