عدالت عالیہ نے بے نظیر قتل کیس کے نظر بند ملزمان کی اپیل نمٹا دی

عدالت عالیہ نے بے نظیر قتل کیس کے نظر بند ملزمان کی اپیل نمٹا دی

  

راولپنڈی (این این آئی) عدالت عالیہ نے بے نظیر قتل کیس کے نظر بند ملزمان کے بارے میں محکمہ داخلہ پنجاب کو جلد میرٹ پر فیصلہ کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے نظر بند ملزمان کی اپیل نمٹا دی ۔ کیس کی سماعت جمعرات کو لاہور ہائی کورٹ راولپنڈی بنچ میں ہوئی۔ سماعت جسٹس محمد طارق عباسی نے کی ۔ اس موقع پر ضلعی انتظامیہ نے ملزمان کی نظر بندی کے حوالے سے جواب داخل کرا دیا ۔دوران سماعت فاضل جج نے کہاکہ ٹرائل کورٹ کی جانب سے بریت کے بعد ضلعی انتظامیہ کے احکامات پر نظر بندی خلاف ضابطہ نہیں ہے اور اگر مدعی یہ سمجھتے ہیں کہ نظر بندی کا فیصلہ عدالتی احکامات کے برعکس ہے تو توہین عدالت کی درخواست دائر کریں ۔ اڈیالہ جیل میں نظر بند ملزمان شیر زمان،حسنین گل اور رفاقت حسین کے وکیل ملک جواد خالد ایڈووکیٹ اور راؤ عبدالرحیم ایڈووکیٹ پیش ہوئے جبکہ اسسٹنٹ ایڈووکیٹ جنرل پنجاب ندیم بھٹی بھی موجود تھے ۔اسسٹنٹ ایڈووکیٹ جنرل نے فاضل عدالت کو بتایاکہ ملزمان کی ایک ماہ کی نظر بندی کی مدت کے خاتمہ کے بعد ایڈیشنل سیکرٹری داخلہ پنجاب نے علیحدہ نوٹیفکیشن جاری کرتے ہوئے ملزمان کی نظر بندی میں دو ماہ کی توسیع کی تھی جسے ملزمان کی جانب سے چیلنج نہیں کیا گیا لہذا نظر بندی کے خلاف دائر درخواستیں قابل سماعت نہیں ۔عدالت عالیہ نے نظر بندی کے خلاف دائر درخواستیں ایڈیشنل سیکرٹری داخلہ پنجاب کو بھجواتے ہوئے کہاکہ پنجاب حکومت میرٹ پر فیصلہ کرتے ہوئے مناسب وقت میں معاملہ نمٹائے ۔

مزید :

صفحہ آخر -