بنگلہ دیشی آرمی آفیسر نے بیمار روہنگیا خاتون کو اپنے ہاتھوں پر اٹھا کر انسانیت کی عظیم مثال قائم کردی

بنگلہ دیشی آرمی آفیسر نے بیمار روہنگیا خاتون کو اپنے ہاتھوں پر اٹھا کر ...
بنگلہ دیشی آرمی آفیسر نے بیمار روہنگیا خاتون کو اپنے ہاتھوں پر اٹھا کر انسانیت کی عظیم مثال قائم کردی

  

ڈھاکہ (ڈیلی پاکستان آن لائن) انسانیت کی خدمت کا جذبہ کسی بھی انسان کے عہدے ، مقام اور مرتبے کے تحت نہیں ہوتا، جب یہ پروان چڑھتا ہے تو ہر انسان اپنے منصب و مقام اور حیثیت کو بالائے طاق رکھتے ہوئے انسانیت کی خدمت کے لئے قدم بڑھا لیتا ہے۔ میانمار حکومت نے روہنگیا مسلمانوں پر مظالم کے پہاڑ توڑے تو دوسری جانب بنگلہ دیشی حکومت اور عوام نے ان کی خدمت کرتے ہوئے ایثار و قربانی کی نئی مثالیں قائم کردیں ۔ ایک کسان گھر کا سارا سامان لے کر روہنگیا مہاجرین کی خدمت کے لئے پہنچ گیا ، جبکہ بنگلہ دیشی آرمی کے لیفٹیننٹ کرنل بھی ایک بیمار خاتون کو اپنے ہاتھوں پر اٹھا کر پیدل ہی مہاجر کیمپ کی جانب چل پڑے ۔

وزیر اعلیٰ پنجاب کے حکم پر کیپٹن حسنین نواز شہید کے بھائی کو نوکری دی دے گئی

بنگلہ دیش آرمی کی34بی جی بی بٹالین کے سربراہ لیفٹیننٹ کرنل منظور روہنگیا مہاجرین کی آمد کو دیکھنے کے لئے سرحد پر پہنچے تو وہاں موجود افراد کی داستان غم دیکھ کر ان کی آنکھیں نم ہو گئیں ، ان کی نظر مہاجرین میں موجود ایک بیمار اور لاچار خاتون پر پڑی ، لیفٹیننٹ کرنل نے وہاں موجود آرمی کے جوانوں سے خاتون کو ہسپتال لے جانے کے لئے سٹریچر لانے کو کہا ، مگر وہاں پر کوئی ایسا سامان موجود نہیں تھا جس کے ذریعے خاتون کو ہسپتال منتقل کیا جائے، اس ساری صورت حال کو دیکھتے ہوئے وہ خود آگے بڑھے اور خاتون کو اپنے ہاتھوں پر اٹھا کر پیدل ہی ہسپتال کی جانب چل پڑے۔ لفٹیننٹ کرنل منظور کا انسانی خدمت کا یہ جذبہ دیکھ کر ہر آنکھ اشکبار ہوگئی جبکہ روہنگیا مہاجرین نے ان کے اس جذبے کو سلام کیا۔

مزید : بین الاقوامی