ہائیکورٹ :نیب کے نئے چیئرمین کی تعیناتی کو کالعدم کرنے اورپانامالیکس میں شامل تمام افراد کے احتساب کی درخواست مسترد

ہائیکورٹ :نیب کے نئے چیئرمین کی تعیناتی کو کالعدم کرنے اورپانامالیکس میں ...
ہائیکورٹ :نیب کے نئے چیئرمین کی تعیناتی کو کالعدم کرنے اورپانامالیکس میں شامل تمام افراد کے احتساب کی درخواست مسترد

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے نیب کے نئے چیئرمین کی تعیناتی کا کالعدم قرار دینے اورپانامالیکس میں شامل تمام افراد کے احتساب کے لئے دائر درخواست ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے مسترد کر دی۔

جسٹس شاہد کریم نے کیس کی سماعت کی، درخواست گزار محمد الیاس نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ پاناما لیکس میں 300 سے زائد افراد کا نام آیا ہے لیکن شریف خاندان کے سوادیگرافراد کا احتساب نہیں کیا جا رہا،صرف شریف خاندان کا احتساب ہونا اور باقی کو نظر انداز کرنا آئین اور قانون کی خلاف ورزی ہے، پانامالیکس میں شامل دیگر افراد کا بھی احتساب کیا جائے، احتساب کے سپریم ادارے کے نئے چیئرمین نیب کے تعیناتی بھی قانون کے برعکس ہوئی ہے، درخواست گزار نے استدعا کی کہ عدالت پاناماکیس کے دیگر کرداروں کے خلاف کاروائی کا حکم دے،پانامالیکس میں شامل دیگر افراد کا نام ای سی ایل میں شامل کیاجائے اور نئے چیئرمین نیب کی تعیناتی کالعدم قرار دی جائے،عدالت نے درخواست ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے مسترد کر دی ہے۔

مزید : لاہور