افغانستا کے 32صوبوں میں الیکشن آج ، طالبان کا بائیکاٹ کا اعلان

افغانستا کے 32صوبوں میں الیکشن آج ، طالبان کا بائیکاٹ کا اعلان

  

کابل/قندھار (این این آئی،صباح نیوز)افغانستان میں قومی اسمبلی کی 250نشستوں پر انتخابات آج ہونگے جس کے دور ان امن وامان کے قیام کیلئے تقریباً 54ہزار سکیورٹی اہلکار تعینات کئے گئے ہیں ۔ افغان حکام نے کہاکہ صوبہ غزنی اور قندھار میں خراب صورتحال کی وجہ سے انتخابات ملتوی کر دیئے گئے ہیں اور دیگر 32صوبوں میں انتخابات ہونگے ۔2001میں امریکی فوجی آپریشن کے نتیجے میں طالبان حکومت کے خاتمے کے بعد یہ تیسرے پارلیمانی انتخابات ہیں ۔افغان آزاد انتخابی کمیشن کے مطابق ولسی جرگہ یا ایوان زریں کی 250نشستوں کیلئے تقریباً 2565امیدوار میدان میں ہیں جن میں 417خواتین امیدوار شامل ہیں ۔دارالحکومت کابل میں امیدواروں کی تعداد 804ہے جن میں 119خواتین شامل ہیں ۔ امیدواروں کی اکثریت آزاد حیثیت سے انتخابات لے رہی ہے تاہم نائب صدر اول جنرل عبد الرشید دوستم کی جنبش ملی اسلامی نے 44امیدوار ٗحکمت یار کی سربراہی میں حزب اسلامی نے 42اور ڈپٹی چیف ایگزیکٹو حاجی محمد محققی حزب واحد ت اسلامی مردم نے 22امیدوار کھڑے کئے ہیں ۔پارلیمنٹ میں خواتین کی نشستوں کی تعداد 68ہے اور افغان قوانین کے مطابق انتخابات متناسب نمائندگی کی بنیاد ہونگے ۔افغان وزارت داخلہ کے مطابق انتخابات کیلئے7368پولنگ سٹیشن بنائے گئے ہیں انتخابی کمیشن کے مطابق ووٹروں کی تعداد تقریباً 90لاکھ ہے جس میں تقریباً 30 لاکھ 67ہزار خواتین اور6 5لاکھ 68ہزار مرد ٗ ایک لاکھ 68ہزار خانہ بدوش اور 583اقلیتی لوگ شامل ہیں ۔افغان وزارت داخلہ کے مطابق امن وامان کے قیام کیلئے تقریباً 54سات سو67سکیورٹی اہلکار تعینات کئے گئے ہیں جبکہ 5100مزید تیاری کی حالت میں ہونگے ۔ ووٹوں کی گنتی 10نومبر کو شروع ہوگی اور حتمی نتائج 20دستمبر کو جار ی کئے جائینگے ۔افغان انسانی حقوق کی تنظیم کے مطابق جولائی میں انتخابی عمل شروع ہونے کے بعد سے اب تک انتخابی مہم پر 30حملے ہوئے ہیں۔ کمیشن کی سربراہ سیما ثمر نے بتایا کہ ان حملوں میں 10امیدواروں سمیت 54افراد جاں بحق اور 186زخمی ہوچکے ہیں ۔انتخابی کمیشن کے ترجمان سید حفیظ اللہ ہاشمی نے بھی مہم کے دور ان دس امیدواروں کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کی ہے ۔ہاشمی نے کہاکہ انتخابات کی نگرانی کیلئے 19غیر ملکی مبصرین سمیت تقریباً ہزاروں مقامی مبصرین تعینات کئے جائینگے ۔ طالبان نے انتخابات کو امریکی منصوبہ قرار دیتے ہوئے لوگوں سے انتخابات کے بائیکاٹ اور امیدواروں سے اس عمل سے الگ ہونے کا مطالبہ کیا ہے ۔

افغانستان/انتخابات

اسلام آباد(صباح نیوز)پاکستان نے افغانستان میں آج ہونے والے پارلیمانی انتخابات کے پیش نظر طورخم اور چمن کی سرحد یں2روز کیلئے عارضی طورپر بند کر دی گئیں۔ دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا ہے کہ طور خم اور چمن سرحد افغانستان کی درخواست پر بند کی گئی۔ترجمان نے کہا کہ یہ فیصلہ افغانستان میں پارلیمانی انتخابات کے خوش اسلوبی سے انعقاد میں تعاون کیلئے کیا گیا ہے۔ڈاکٹر محمد فیصل نے مزید کہا کہ ہنگامی نوعیت کی صورتحال کے سوا یہ گزرگاہیں ہر قسم کی آمدورفت کیلئے بند رہیں گی۔

طورخم ،چمن بارڈر/بند

مزید :

صفحہ اول -