میانمار کی رہنما آنگ سانگ سوچی کا گھر کے معاملے پر بھائی سے تنازع

میانمار کی رہنما آنگ سانگ سوچی کا گھر کے معاملے پر بھائی سے تنازع

  

نیپی دیا(مانیٹرنگ ڈیسک) میانمار کی کونسلر آف اسٹیٹ آنگ سانگ سوچی اور ان کے چھوٹے بھائی آنگ سانگ اْو کے درمیان آبائی گھر کی ملکیت کے معاملے پر تنازعہ کھڑا ہو گیا ہے۔بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق میانمار کی رہنما آنگ سانگ سوچی کے چھوٹے بھائی آنگ سانگ اْو نے عدالت میں اپنے خاندانی گھر پر حق ملکیت کا دعویٰ دائر کرتے ہوئے گھر کی نیلامی اور اپنے حصے کا مطالبہ کیا ہے۔ چھوٹے بھائی نے بہن پر الزام لگایا ہے کہ 15 سال تک وہ بلا شرکت غیرے گھر استعمال کرتی رہیں جس پر کبھی اعتراض نہیں کیا۔میانمار کے پْر فضاء مقام پر جھیل کنارے واقع دو منزلہ عمارت پرانی طرز پر تعمیر شدہ ہے جس کی مالیت 90 ملین ڈالر کے لگ بھگ ہے تاہم اب اس گھر کو سرکاری اہمیت بھی حاصل ہوگئی ہے۔ یہ وہی گھر ہے جہاں سیاسی جدوجہد اور فوجی مظالم کے خلاف صدائے احتجاج بلند کرنے پر آنگ سانگ سوچی کو 15 سال تک نظر بند رکھا گیا تھا۔

سوچی تنازع

مزید :

صفحہ اول -