وہاڑی،بجلی تار کی زد میں آکر جاں بحق ہونیوالے بہن بھائی سپرد خاک،علاقے میں سوگ

وہاڑی،بجلی تار کی زد میں آکر جاں بحق ہونیوالے بہن بھائی سپرد خاک،علاقے میں ...

  

وہاڑی(بیورو رپورٹ+نامہ نگار)ضلعی انتظامیہ اور منتخب ارکان اسمبلی کی بے حسی کی انتہایاغفلت کہی جائے کہ گزشتہ روزنواحی بستی کالووالی میں 11کے وی بجلی تاروں کی زدمیں آکرجاں بحق ہونے والے معصوم بہن بھائی کی نمازجنازہ میں ڈپٹی کمشنرسمیت ضلعی انتظامیہ کاکوئی افسرشریک نہیں ہو(بقیہ نمبر40صفحہ12پر )

ااورنہ ہی منتخب ارکان اسمبلی نے شرکت کی جبکہ ملتان اوروہاڑی سے واپڈاکی ٹیمیں جنازہ میں شریک تھیں۔تفصیل کے مطابق گزشتہ روزبستی کالووالی کے محنت کش ریاض احمدکے بیٹی اوربیٹابجلی کی تار کی زدمیں آکرجاں بحق ہوگئے تھے ان کی نمازجنازہ آبائی بستی میں اداکردی گئی نمازجنازہ میں اہل علاقہ سمیت سماجی شخصیات نے شرکت کی جبکہ ڈپٹی کمشنرعرفان علی کاٹھیاسمیت کسی بھی انتظامی افسرنے شرکت نہیں کی اسی طرح منتخب اراکین اسمبلی یاان کے کوئی نمائندہ بھی جنازہ میں شریک نہیں ہوااس صورتحال پرعوامی حلقوں نے شدیدحیرانگی اورمایوسی کااظہارکیاہے دونوں بچوں کوآہوں اورسسکیوں میں مقامی قبرستان میں سپردخاک کردیاگیاہے۔دریں اثناء ایکسین آپریشن میپکو ڈویژن وہاڑی شاہد نذیر نے بستی کالو والی چک نمبر 42/W.B وہاڑی میں 11000 ہزار وولٹ کی مین تار ٹوٹ کر گرنے اور اس سے جانی نقصان پر بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ بجلی کی ترسیل کے ساتھ ساتھ میپکو اتھارٹی کا اولین کام لوگوں کے جان اور مال کی حفاظت بھی ہے کیونکہ بجلی ایک اَن دیکھا دشمن ہے ہمارا اولین کام ہی سیفٹی کا ہے ۔ ہم نہ صرف خود بلکہ اپنے سٹاف کو بھی ہر روز سیفٹی کے حوالے سے بر یفنگ دیتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ بات انتہائی افسوس ناک ہے کہ دو معصوم بچے اس حادثے میں اللہ کو پیارے ہو گئے، ہم دکھ کی اس گھڑی میں ہر طرح سے لواحقین کے ساتھ کھڑے ہیں،حادثے کے بارے میں تفصیلات بتاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حادثہ دراصل کپاس کے کھیت میں بستی کالو والی سے تقریبا ایک کلو میٹر دور 24/W.B فیڈر کی 11000 وولٹ کی لائن کے تار ٹوٹنے کی وجہ سے پیش آیا، یہ 11KV کی لائن قبرستان چک نمبر 42/W.B اور بستی کالو والی کے درمیان کپاس کے کھیتوں میں سے گزر رہی ہے۔ انہوں نے مزید بات کرتے ہوئے کہا کہ اتھارٹی سیفٹی کے بارے میں کسی قسم کا کوئی کمپرومائز نہیں کر رہی ہے،ایس ای میپکو سرکل وہاڑی رئیس عبدالاحد نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ایل ایس انچارج فیڈر ریحان علی اورلائن مین کو فوری معطل کر دیا اورچیف ایگزیکٹو میپکو کوواقعہ کی اطلاع دی جس پرچیف ایگزیکٹو میپکو نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ ایس ڈی او کو بھی معطل کر دیا ہے اور محکمہ کی سیفٹی اور مانیٹرنگ کی ٹیمیں جائے وقوع پر پہنچ گئی ہیں اور یہ ٹیمیں 24گھنٹے میں حادثے کی اصل وجوہات چیف ایگز یکٹو کو پیش کریں گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگر اس حادثہ میں میپکو کے کسی بھی ملازم کی کوئی غفلت پائی گئی تو اس کے خلاف محکمانہ قوانین کے مطابق کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔

سوگ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -